کمیونٹی ہال نوشہرو فیروز میں کھلی کچہری کے دوران عوامی مسائل کے حل کیلئے ہدایات جاری

کراچی : سندھ حکومت کے ترجمان مشیر قانون ، ماحولیات و ساحلی ترقی بیر سٹر مرتضیٰ وہاب نے کمیونٹی ہال نوشہرو فیروز میں کھلی کچہری کے دوران عوامی مسائل سنے اور موقع پر ہی انکے حل کیلئے ہدایات جاری کیں۔ اس موقع پر رہنما پپپلزپارٹی اور سابق وزیر قانون ضیاء الحسن لنجار، ارکان قومی و صوبائی اسمبلی زوالفقار بیہن، ممتاز چانڈیو،سید سرفراز شاہ، سکریٹری محکمہ ماحولیات و ساحلی ترقی خان محمد مہر، سکر یٹری محکمہ قانون شارق احمد، ڈی سی نوشہرو فیروز کیپٹن (ر) بلال شاہد راؤ ، ایس ایس پی ڈاکٹر فاروق احمد، فیروز جمالی، ودیگر افسران کھلی کچہری میں موجود تھے۔کھلی کے دوران اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے مشیر قانون نے کہا کہ پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی خصوصی ہدایات پر سندھ بھر میں صوبائی وزراء و مشیر کھلی کچہریاں منعقد کرکے عوام کے مسائل معلوم کرکے ان کے حل کے لئے فوری اقدامات کئے جارہے ہیں۔اس موقع پر یونس راجپر، غلام نبی کوریجو،وکیل شفقت حسین،طالب لاشاری،محمد خان کورائی، فیاض علی چانڈیو،بڈھل ملک، عبدالستار سولنگی، احمد خان خاصخیلی اور دیگر نے تعلیم،صحت، صفائی، نکاسی آب، سول اسپتال نوشہروفیروز کو ڈسٹرکٹ اسپتال کا درجہ دلانے ، نوشہروفیروز شہر کو میونسپل کمیٹی بنانے کے علاوہ اسپتالوں میں ڈاکٹرز و سہولیات کی کمی کے علاوہ روزگار اورسرکاری املاک پر غیر قانونی قبضوں کے خلاف شکایات پیش کیں اور اپنے مسائل کے حل کے لئے درخواستیں جمع کرائیں۔

صوبائی مشیر قانون نے عوام کو یقین دہانی کرائی کہ ان کے مسائل کو فوری حل کے لئے متعلقہ محکموں کے افسران کو ہدایات جاری کی جارہی ہیں تاکہ وہ سات روز کے اندر ان مسائل کو حل کرکے رپورٹ فراہم کریں تاکہ وہ وزیر اعلی ٰ سندھ کو پیش کی جاسکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ سندھ حکومت کے محکموں کے متعلق درخواستوں پر جلد کارروائی کی جائے گی تاہم وفاق کے محکموں کےمسائل وزیر اعلی ٰ کے ذریعے وفاق کو بھیجے جائیں گے۔ بعد ازاں سندھ حکومت کے ترجمان مشیر قانون ، ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب نے پریس کلب نوشہرو فیروز میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہریوں کے زیادہ تر مسائل وفاقی نوعیت کے تھے،شہریوں کے معمولی نوعیت اور روز مرہ کے مسائل کے لئے ڈی سی اور ایس ایس پی پر مشتمل کمیٹی قائم کی ہے۔

کمیٹی کو ہفتہ وار رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ہے اور تمام محکموں کے دفاتر بالخصوص ڈپٹی کمشنر اور ایس ایس پی آفیس میں شکایتی باکس لگائے جائیں اور ان میں موصول ہونے والی شکایات کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے ، شہریوں کے گیس، پانی، زرعی پانی ، بجلی اور پولیس سے متعلق مسائل تھے۔ مرتضی وہاب نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت تبدیلی نہیں تباہی کی وجہ ہے،کراچی سے لیکر کشمور تک ہر جگہ گیس کی بندش اور پریشر میں کمی ہے وفاقی حکومت ہوش کے ناخن لےسندھ میں گیس کے بحران پر قابو پانے کے لئے اقدامات اُٹھائے جائیں۔ایک سوال کے جواب میں صوبائی مشیر نے کہا کہ پیپلزپارٹی پورے ملک کی جماعت ہے کہیں بھی ستائیس دسمبر کا پروگرام منعقد کیا جاسکتا ہے،راولپنڈی میں ستائیس دسمبر کے جلسے کے انعقاد کا فیصلہ پارٹی قیادت اور سی ای سی کا ہے جلسے میں پورے ملک سے پارٹی کے کارکن اور عوام راولپنڈی پہنچیں گے۔