کے الیکٹرک کے رویے سے لوگ شدید پریشان ہیں ،ڈپٹی میئر

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) ڈپٹی میئر کراچی سلمان عبداللہ مراد نے کہا ہے کہ کے الیکٹرک کے رویے سے لوگ شدید پریشان ہیں، پیپلزپارٹی نے ہمیشہ نجکاری کی مذمت کی تھی، جو لوگ اقتدار میں تھے انہوں نے کے الیکٹرک کی نجکاری کی حمایت کی ، جہاں بلنگ ہوتی ہے وہاں بھی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کی جاتی ہے، کے الیکٹرک کو واٹر بورڈ کے واجبات کی ادائیگی کرنی ہے، ان کی دادا گیری نہیں چلنے دیں گے، کے الیکٹرک لوگوں پر مظالم ڈھانا بند کرے، اگر یہ روش تبدیل نہ ہوئی تو لوگ سڑکوں پر آئیں گے،دما دم مست قلندر ہوگا، ان خیالات کا اظہار انہوں نے صدر دفتر بلدیہ عظمیٰ کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، ڈپٹی میئر نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی سربراہی میں شہر کی ترقی کے لیے کام جاری رکھیں گے، جماعت اسلامی، پاکستان تحریک انصاف کے دوستوں سے بھی بات ہوئی ہے، اس شہر کو سیاست کی نہیں خدمت کی ضرورت ہے، انہوں نے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو نے اس ملک کو ایٹمی قوت بنایا،پاکستان پر 1993 میں دشمن حملہ کرنے کا سوچ رہا تھا لیکن پاکستان کے ایٹمی قوت بننے کے ساتھ ہی اس کا یہ خواب پورا نہ ہوسکا،انہوں نے کہا کہ 9 مئی ایسا سانحہ ہے جسے ہرگز بھلایا نہیں جا سکتا، انہوں نے کہا کہ مویشی منڈی کے چکر میں نہ پڑا تھا نہ پڑوں گا۔
https://e.jang.com.pk/detail/693929
=====================

سخت گرمی میں کراچی سے خیبر تک بجلی کی لوڈشیڈنگ جاری، عوام سراپا احتجاج
سخت گرمی میں کراچی سے خیبر تک بجلی کی لوڈشیڈنگ جاری، عوام سراپا احتجاج
فوٹو: فائل
ملک کے بیشتر علاقے اس وقت شدید گرمی کی لپیٹ میں ہیں اور ایسے میں کراچی سے خیبر تک بجلی کی لوڈشیڈنگ سے عوام کا جینا محال ہوگیا ہے۔

ضلع خیبر میں لوڈشیڈنگ کےستائے شہریوں نے لنڈی کوتل گرڈ اسٹیشن پر دھاوا بول دیا۔

مشتعل مظاہرین گرڈ اسٹیشن کے اندرگھس گئے اور وہیں دھرنا دے دیا۔ پیپلزپارٹی کے تحت ہونے والے احتجاج میں مظاہرین نے لوڈشیڈنگ ختم کرنےکا مطالبہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں
کراچی میں شدید گرمی اور لوڈشیڈنگ سے عوام تڑپ اٹھے، صرف 6 سے 7 گھنٹے بجلی دستیاب
ملک بھر میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ، پشاور میں مظاہرین نے موٹروے بندکردی
مظاہرین کا کہنا تھا کہ علاقے میں لوڈشیڈنگ 20 گھنٹے سے بڑھ چکی ہے۔

گلگلت بلتستان کے علاقے چلاس میں بھی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خلاف متعدد مقامات پر احتجاج کیا گیا اور تاجروں کی جانب سے شٹر ڈاؤن ہڑتال کی گئی۔

بلوچستان کے علاقے نصیرآباد میں 12 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کے خلاف شہری سڑکوں پر آگئے۔ اوستہ محمد میں شہریوں نے ٹائر جلا کر احتجاج کیا اور شاہراہ بند کردی۔

ملتان میں 4 گھنٹے سے 8 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے،

سندھ کے ضلع مٹیاری میں 12 سے 18گھنٹے بجلی غائب ہے، حیدرآباد سمیت سندھ کے 9 اضلاع میں انٹرمیڈیٹ کے امتحانات کے دوران کئی سینٹرز پر لوڈشیڈنگ کے باعث طلبا کے لیے امتحان دینا چیلنج بن گیا۔

کراچی میں آج زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 41.5 ڈگری سینٹی ریکارڈ کیا گیا، ایسی سخت گرمی میں بھی شہر کے مختلف علاقوں میں 10گھنٹے تک بجلی غائب رہنے کا سلسلہ جاری ہے۔کے الیکڑک نے لوڈشیڈنگ کی وجہ بجلی چوری اور بلوں کی عدم ادائیگی کو قرار دیا ہے۔
https://urdu.geo.tv/latest/366824-
======================

کرنٹ لگنے اور دیگر واقعات میں نانی، نواسی سمیت 6 افراد جاں بحق
30 مئی ، 2024FacebookTwitterWhatsapp
کراچی(اسٹاف رپورٹر) لانڈھی مانسرہ کالونی میں ٹریفک حادثہ میں 28 سالہ فیضان ولد غفور جا ں بحق ہوگیا، سلطان آباد ریلوے ٹریک کے قریب ٹرین کی ٹکر سے 35 سالہ سہیل ولد عبدالمنان جا ں بحق ہوگیا،سائٹ سپر ہائی وے نجی بینک کے قریب دیوار گر نے سے ایک شخص جاں بحق ہوگیا،متوفی کی فوری طور پر شناخت نہیں ہوسکی، علاوہ ازیں بلدیہ 8 نمبر کباڑی چوک کے قریب گھر میں کرنٹ لگنے سے 7 سالہ علشبا اور اسکی نانی50 سالہ رخصانہ کی حالت غیر ہوگئی ،ریسکیو اہلکاروں نے دونوں کو کو اسپتال منتقل کیا جہاں پر ڈاکٹروں نے نانی نواسی کی موت کی تصدیق کردی ،پولیس کاکہنا ہےکہ مسماۃ رخصانہ بی بی نے گھر میں پانی کی موٹر چلانے کیلئے بٹن کو ہاتھ لگایا تو اسے کرنٹ لگ گیا قریب گھڑی علشبا نے اپنی نانی کو ہاتھ لگا یا اور وہ بھی کرنٹ کی زد میں آگئی ، رئیس امروہی سوسائٹی میں گھر میں کام کے دوران کرنٹ لگنے سے 60 سالہ جمال الدین ولد محمد سلمان جاں بحق ہوگیا، متوفی زیر تعمیر گھر میں شٹرنگ کا کام کررہا تھا کہ بجلی کی تار گرنے کی وجہ سےوہ کرنٹ کی زد میں آگیا ،دریں اثنا بھینس کالونی فٹبال بلڈنگ کے قریب فائرنگ کے واقعے میں 40 سالہ غلام رسول ولد محمد طفیل اور 42 سالہ غفوری ولد حسن محمد زخمی ہوگئے ،پولیس کاکہنا ہےکہ واقعہ ڈکیتی مزاحمت پر پیش آیا ہے، ڈالمیا محمدی مسجد کے قریب فائرنگ سے 18 سالہ محمد صالح ولد غلام سرور زخمی ہوگیا، واقعہ ڈکیتی مزاحمت پر پیش آیا ہے،گلشن معمار میں بخش گوٹھ زرگر محلہ میں فائرنگ کے واقعے میں 30 سالہ محمد خان ولد عنایت خان زخمی ہوگیا،پولیس کاکہنا ہےکہ فوری طورپر فائرنگ کی وجوہات معلوم نہیں ہوسکی ہیں، ظفر ٹائون میں چھریوں کے وار سے 45 سالہ سر فراز ولد امداد زخمی ہوگیا،پولیس کاکہنا ہے واقعہ جھگڑے کے دوران پیش آیا ، لاسی گوٹھ لال مدرسہ کے قریب چھریوں کے وار سے 45 سالہ خاتون مسماۃ سلمہ بیگم زوجہ غلام نبی زخمی ہو گئی ، پولیس کاکہنا ہےکہ واقعہ ذاتی جھگڑے کے دوران پیش آیا ہے۔
https://e.jang.com.pk/detail/693922
========================

ایف آئی اے ملکیتی بلڈنگ بجلی کے چار کروڑ کی نادہندہ
30 مئی ، 2024FacebookTwitterWhatsapp
کراچی (اسد ابن حسن) ایف آئی اے کی ملکیت گلستان جوہر میں تین منزلہ وسیع و عریض بلڈنگ موجود ہے۔ اس بلڈنگ میں سائبر کرائم ونگ، کاؤنٹر ٹیررازم ونگ اور اینٹی منی لانڈرنگ و سی ایف ٹی ونگ موجود ہیں۔ مذکورہ بلڈنگ “کے الیکٹرک” اور پی ٹی سی ایل کے کروڑوں روپے کی نادہندہ ہے۔اس بلڈنگ کے گراؤنڈ فلور پر وسیع و عریض انتظارگاہ اور پوری بلڈنگ میں تقریبا 50 کمرے موجود ہیں، ہر کمرے میں ایئر کنڈیشنرز لگے ہوئے ہیں، انتظار گاہ میں تین بڑے اے سی لگے ہوئے ہیں ۔ بجلی کا بل سات سے دس لاکھ روپے ماہانہ آتا ہے جو کئی برس سے ادا نہیں کیا جا رہا اور اس ماہ بجلی کے بل کی رقم تین کروڑ 25 لاکھ 50 ہزار 120 روپے ہے۔ ادائیگی کی تاریخ 20 جون ہے۔ بل کے ساتھ بجلی منقطع کرنے کا آخری نوٹس بھی منسلک کیا گیا ہے جس میں مجموعی ادائیگی کی رقم چار کروڑ 8 ہزار 420 روپے ہے۔ اسی طرح ٹیلی فون کمپنی پی ٹی سی ایل کے واجبات بھی تھے لہذا تمام فون منقطع کر دیے ہیں۔ ذرائع کے مطابق پوری بلڈنگ کا ایک ہی کمرشل میٹر ہے ۔ حیرت انگیز طور پر سائبر کرائم کے سالانہ بجٹ کی رقم صرف 40 سے 50 لاکھ روپے ہے۔ باقی دونوں ونگز یعنی سی ٹی ڈبلیو اور اے ایم ایل کے لیے کوئی بجٹ مختص ہی نہیں ہے۔ تینوں اداروں کو پٹرول، اسٹیشنری، عدالتی پیروی اور دیگر اخراجات کرنے ہوتے ہیں لہذا عرصے سے یوٹیلٹی بلز ادا ہی نہیں کیا جا رہے۔ مذکورہ حوالے سے ایف آئی اے کے کئی افراد سے بات کرنے کی کوشش کی گئی مگر انہوں نے جواب دینے سے گریز کیا۔
https://e.jang.com.pk/detail/694109