استاد راحت فتح علی خان کے لیے 2019 کیسا رہا؟

بین الاقوامی شہرت یافتہ میوزک پروڈیوسر سلمان احمد نے کہا ہے کہ استاد راحت فتح علی خان سے میرا روح کا رشتہ ہے۔ ہم ایک دوسرے سے انتہائی محبت کرتے ہیں اور دُنیا کے کئی ممالک کا ایک ساتھ سفر کرچکے ہیں۔ 2019ء ہمارے لیے بہت شاندار رہا۔

پروڈیوسر سلمان احمد نے کہا کہ ہم نے مختلف ممالک میں کامیاب شوز کیے اور آکسفورڈ یونیورسٹی سے استاد راحت فتح علی خان کو موسیقی کے شعبے میں نمایاں خدمات انجام دینے پر لندن میں پی ایچ ڈی کی اعزازی ڈگری سے نوازا گیا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے لندن سے کراچی آمد پر جنگ سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔

سلمان احمد نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ شوبز انڈسٹری سے وابستہ ہوئے مجھے 30 برس ہوچکے ہیں۔ بالی ووڈ کی ایک فلم میں نانا پاٹیکر کے ساتھ اداکاری بھی کرچکا ہوں۔ استاد راحت فتح علی خان کے بین الاقوامی لائیو کنسرٹ کی کمپیئرنگ بھی کرتا ہوں۔ پانچ برس قبل ایک گیت ’محبت بھی ضروری تھی، بچھڑنا بھی ضروری تھا‘ پروڈیوس کیا، جسے یوٹیوب پر 80 کروڑ بار دیکھا جا چُکا ہے
یک سوال کے جواب میں سلمان احمد نے بتایا کہ میں وہ پاکستانی ہوں، جو پاکستان سے لندن نہیں گیا، بلکہ لندن سے پاکستان آیا۔ میری پیدائش اور تعلیم و تربیت سب لندن میں ہوئی اور استاد راحت فتح علی خان کے ساتھ پچھلے دس برسوں سے کام کر رہا ہوں، 2019ء میں نت نئے تجربات کیے۔

اُنہوں نے بتایا کہ پہلی بار استاد راحت نے موسیقی میں فیوژن پیش کیا، جسے عالمی سطح پر نوجوانوں نے بہت پسند کیا۔

اُنہوں نے اپنے اور راحت فتح علی خان کے رواں برس کے آخری شو کے حوالے سے بتایا کہ ان دنوں ہم رواں برس کے آخری شو کی تیاریوں میں مصروف ہیں، جو 27 دسمبر کو دبئی میں ہوگا، اس شو میں خان صاحب کے مداح اُنہیں نئے روپ میں دیکھیں گے اور آڈیٹوریم میں ہزاروں شائقینِ موسیقی شریک ہو سکیں گے۔

سلمان احمد نے مزید بتایا کہ 2019ء میں آسٹریلیا، کینیڈا، امریکا کی مختلف ریاستیں، برطانیہ، سعودی عرب اور دیگر ممالک میں شاندار لائیو کنسرٹس کیے۔

اُنہوں نے بھارتی ادکار سلمان خان کی ’دبنگ 3‘ سے راحت فتح علی خان کا گانا ہٹانے کے حوالے سے بتایا کہ سلمان خان کی فلم ’دبنگ 3‘ میں خان صاحب کے دو گیت شامل کیے گئے۔ ان گیتوں کی شوٹنگ بھی ہوگئی تھی، مگر دونوں ممالک کی کشیدگی کی وجہ سے آخری وقت میں فلم سے گانے الگ کر دیے گئے، جس کا ہم سب کو افسوس ہے۔

اُنہوں نے مزید بتایا کہ آئندہ برس 2020ء میں استاد راحت فتح علی خان کے قوالی کنسرٹ زیادہ ہوں گے۔