ایف پی سی سی آئی کی قائمہ کمیٹی برائے کمیونیکیشن اور پی آر کا افتتاحی اجلاس

کمیٹی کے اراکین نے متفقہ طور پر عمران رانا کو سیکریٹری مقرر کیا، ایف پی سی سی آئی کی قیادت کی حمایت اور پاکستان کے ایجنڈے کو آگے بڑھانے کا عہد

ایک اہم سنگِ میل میں، FPCCI کی قائمہ کمیٹی برائے مواصلات اور PR نے اپنا پہلا اجلاس FPCCI سنٹرل سٹینڈنگ کمیٹی برائے کارپوریٹ ریلیشنز اینڈ کمیونیکیشن اینڈ PR کے کنوینر شجاعت علی بیگ کی رہائش گاہ پر منعقد کیا۔ اجلاس نے کمیٹی کے سفر میں ایک نئے باب کا آغاز کیا، کیونکہ اراکین 2024-2025 کی مدت کے لیے منصوبوں اور حکمت عملیوں پر غور و خوض کرنے کے لیے جمع ہوئے۔ کنوینر شجاعت علی بیگ کی طرف سے ان کی رہائش گاہ پر میٹنگ کا اہتمام ایک شاندار برنچ میں کیا گیا۔ اجلاس میں اہم شخصیات نے شرکت کی جن میں: – سید تراب شاہ، کمیٹی کے ڈپٹی کنوینر اور ڈائریکٹر مارکیٹنگ اوصاف گروپ، – عمران رانا، کے الیکٹرک کے سینئر ڈائریکٹر کمیونیکیشنز، انوویشنز اینڈ انسائٹس اور ایف پی سی سی آئی کمیٹی کے نئے تعینات ہونے والے سیکرٹری – فرحان احمد، کارپوریٹ کمیونیکیشن کے سربراہ، HBL اور کمیونیکیشن ایسوسی ایشن آف پاکستان کے صدر، – چنگیز حسین خان، ہیڈ آف کارپوریٹ کمیونیکیشن، پی آئی اے – حسن سعید اکبر، کارپوریٹ کمیونیکیشن اور مارکیٹنگ و پی آر کے سربراہ، JS بینک گروپ – مدثر عالم، ڈائریکٹر مارکیٹنگ، پاکستان ٹوڈے – عمار مظفر، ڈپٹی منیجر میڈیا اینڈ پی آر، کے الیکٹرک – روبینہ راشد، سابق ڈائریکٹر، CPNE موجود تھے۔

اجلاس کے دوران کمیٹی ممبران نے متفقہ طور پر عمران رانا کو ایف پی سی سی آئی کی قائمہ کمیٹی برائے کارپوریٹ ریلیشنز، کمیونیکیشن اور پی آر کا سیکرٹری مقرر کرنے پر مبارکباد دی۔ کنوینر اور ممبران نے فیڈریشن اور اس کے متنوع اسٹیک ہولڈرز کے درمیان ایک پل بنا کر FPCCI کی قیادت کو سپورٹ کرنے کے طریقوں پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ کمیٹی نے ایف پی سی سی آئی کی دیگر کمیٹیوں کے مختلف اقدامات کو فعال طور پر سپورٹ کرنے کا عزم کیا اور مقامی اور بیرون ملک پاکستان کے مفاد کو آگے بڑھانے کے لیے مختلف رائے سازوں کو شامل کرنے پر آمادگی ظاہر کی۔ ممبران نے FPCCI سنٹرل سٹینڈنگ کمیٹی برائے کارپوریٹ ریلیشنز، کمیونیکیشن اور PR کے زیر اہتمام 2024 تا 2025 ٹرم کے پروگراموں اور سرگرمیوں کے کیلنڈر پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ اس افتتاحی میٹنگ نے کمیٹی کے لیے ایک اہم قدم آگے بڑھایا، کیونکہ اراکین نے پاکستان کے مفادات کو فروغ دینے کے لیے مل کر کام کرنے اور ملک کے اقتصادی اور کاروباری منظر نامے کی تشکیل میں FPCCI کے اقدامات کی حمایت کرنے کا عہد کیا۔