امریکی صدر کامواخذہ ہوگا، ایوان نمائندگان میں قرارداد منظور

امریکا کے ایوانِ نمائندگان میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مواخذے کے حق میں 2 قرار دادیں منظور ہوئی ہیں۔امریکی ایوانِ نمائندگان نے اختیارات کے غلط استعمال اور کانگریس کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کے 2 آرٹیکلز کی منظوری دے دی، 230 میں سے 197 ووٹ کی اکثریت سے قرارداد منظور کی گئی ہے ، تاہم معاملہ اب سینیٹ میں بھیجا جائے گا ۔ امریکی میڈیا کے مطابق ڈیموکریٹس کو سینیٹ میں دوتہائی اکثریت حاصل نہیں اورسینیٹ میں مواخذے کی قرارداد منظورہونے کا کوئی امکان نہیں ۔ امریکی صدرڈونلڈٹرمپ نے اس حوالے سے ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ مواخذہ ان کانہیں بلکہ ڈیموکریٹس کاہوناچاہیے۔مواخذے کے اگلے مرحلے کے لئے مکمل تیار ہوں ۔ مواخذے کی کاروائی وقت کاضیاع ہے ، تین سال تک افواہوں اور دھوکوں کے بعد آج ڈیموکریٹس محبِ وطن امریکی عوام کے ووٹ کومنسوخ کردیناچاہتے ہیں ۔ڈیموکریٹس نے خود کو ہمیشہ کیلئےشرمندہ کرلیاہے۔
دوسری جانب ہاؤس اسپیکر نینسی پلوسی نے میڈیا بریفنگ میں کہا کہ امریکی صدرکامواخذہ ہوگا۔آج کا دن آئین کیلئے اچھا لیکن شہریوں کیلئے افسوسناک ہے۔
امریکی صدرٹرمپ کے مواخذے کا معاملہ آئندہ سال جنوری میں سینٹ میں زیرِ بحث آئےگا۔