سندھ حکومت نے اوگرا کا 245 فیصد گیس مہنگی کرنے کا فیصلہ مسترد کردیا.

وفاق سندھ میں گیسمہنگی کرنے کا فیصلہ واپس لے،
سب سے زیادہ گیسکی پیداوار صوبہ سندھ کی ہے،پھر سندھ کے عوام کو گیس مہنگی کیوں دی جارہی ہے؟سندھحکومت
وفاق سندھکونظراندازکررہا ہے,کوئی مشورہ نہیں کیا جارہا،یہی رویہ رہا تو پھر نتائج بہت خرابنکلیں گے, وزیر ٹرانسپورٹ اویس شاہ
کراچی(اسٹافرپورٹر)سندھ حکومت نے اوگرا کا 245 فیصد گیس مہنگی کرنے کا فیصلہ مسترد کردیاہے.سندھ کے وزیر ٹرانسپورٹ اویس شاہ نے مزید اپنے جاری بیان میں کہا ہے کہ وفاقسندھ میں گیس مہنگی کرنے کا فیصلہ واپس لے،سب سے زیادہ گیس کی پیداوار صوبہ سندھ کیہے،پھر سندھ کے عوام کو گیس مہنگی کیوں دی جارہی ہے؟ملک میں گیس مہنگی ہونے سےسندھ میں کرائے اور مہنگائی بڑھ جائے گی.اویس شاہ نے کہا کہ پنجاب کو ہر معاملے پرسبسڈی دی جارہی ہے اور سندھ کو ہر ماہ مہنگائی کاتحفہ دیاجاتاہے,گیس میں اضافہعوام کے ساتھ ظلم ہے,50 یونٹ تک گیس استعمال کرنےکی قیمت 121 میں سے 380 روپے کردی گئی,وفاقکو سی این جی سیکٹر کے لیے گیس کی قیمت میں 31 فیصد اضافہ نہیں کرنےدیںگے,وفاقی حکومت نے گیس کی نرخوں میں اضافہ کیا تو ٹرانسپورٹرز اور عوام سڑکوں پرہونگیں,سب سے زیادہ سندھ گیس پیداکرتا ہے،پھر بھی سندھ میں گیس کی لوڈشیڈنگ کیجارہی ہے.انہون نے کہا کہ وفاق سندھ کونظراندازکررہا ہے,کوئی مشورہ نہیں کیاجارہا،یہی رویہ رہا تو پھر نتائج بہت خراب نکلیں گے,وزیراعظم عوام پر رحم کریں،وزیراعظماپنی نالائقی کا حساب سندھ کے عوام سے نہ لیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں