سندھ میں پولیس کا ایک آئی جی پی ، 9 ایڈیشنل آئی جیز ہیں

* سالانہ پولیسنگ پلان

* سندھ میں پولیس کا ایک آئی جی پی ، 9 ایڈیشنل آئی جیز ہیں

* پولیس چالان میں دہشت گردی ، اسٹریٹ کرائم ، اغوا برائے تاوان، گٹکا / مین پوری، امن و امان کے امور، کارو کاری اور قبائلی فساد، ٹارگیٹ کلنگ وار سی پیک سکیورٹی شامل ہیں

* جرائم کی روک تھام

* 89 لوگ جھوٹے میں کونوٹ ہوگئے، یہ ایک بڑا چیلنج ہے، اس پر خاص توجہ مرکوز کی گئی ہے، آئی جی پولیس کی کمیشن کی آگاہی

* سال 2018 کے مقابلے میں 23 فیصد ایف آئی آر زیادہ رجسٹرڈ ہوئی ہیں

* 1055911379 اسلحہ برآمد کیا، 265 دہشت گرد/ ٹارگیٹ کلرز کو گرفتار کیا گیا

* موجودہ سال میں 690000 کالز 15 پر موصول ہوئیں، جن میں 59850 کالز جعلی تھیں

* سہی کالز پر 2746 کیس رجسٹرڈ کیے گئے، ئی جی پولیس کی کمیشن کی آگاہی

* وزیراعلیٰ سندھ نے شرجیل میمن کی توجہ پر پولیس کے نچلے گریڈکے ملازمین کیلئے سوسائیٹی قائم کرنے کا فیصلہ

* یہ گھر پولیس والوں کو ملکیت کے طور پر دیئے جائیں گے، ترجمان وزیراعلیٰ سندھ

* پولیس کی جوابدہی کے حوالے سے اہم اقدامات کیے گئے ہیں

* 20979 اہم اور معمولی سزائیں دی گئیں

* وزیراعلیٰ سندھ کا پولیس پی آر ڈپارٹمنٹ بنا کر وہاں سے پولیس کی کارکردگی، جرم کے خلاف اقدامات کے حوالے سے میڈیا کو آگاہ کرنے کا فیصلہ

* پولیس نے وزیراعلیٰ سندھ کی ہدایت پر پولیس ٹریننگ اور کالیجز کو بہتر کئے ہیں

* اسکول آف پبلک ڈس آرڈر اور روئٹ مینجمنٹ، انٹیلیجنس اینڈ انوسٹیگیشن قائم کیا گیا ہے

* ٹریننگ کے جدید ماڈیول ڈولپ کئے جا رہے ہیں

* وزیراعلیٰ سندھ کی ہدایت پر اضلاع میں پولیس لائنز کی مرمت کی جا رہی ہے، اجلاس میں آگاہی

عبدالرشید چنا
میڈیا کنسلٹنٹ وزیراعلیٰ سندھ