ہندو برادری کے آج ہونے والے تہوار ہولی سے قبل حکومت سندھ کے حکم کے باوجود مارچ کی پیشگی تنخواہوں کی ادائیگی نہ ہو سکی،


میرپورخاص تحسیب احمدخانرپورٹ~
ہندو برادری کے آج ہونے والے تہوار ہولی سے قبل حکومت سندھ کے حکم کے باوجود مارچ کی پیشگی تنخواہوں کی ادائیگی نہ ہو سکی، اتوار کو ہندو برادری کا تہوار ہولی ہے اور اب پیشگی تنخواہیں پیر کے دن ہو سکیں گی، ہندو برادری کے سرکاری ملازمین کا کہنا ہے کہ تنخواہوں کی پیشگی ادائیگی کے بغیر ہولی کا مزا کرکرا ہو گیا ہے تفصیلات کے مطابق حکومت سندھ کی جانب سے ہندو برادری کے تہوار “ہولی” کے موقع پر ہندو سرکاری ملازمین کو مارچ کی پیشگی تنخواہیں 22 مارچ بروز جمعہ کو دینے کے واضح احکامات جاری کرنے کے باوجود سرکاری و نجی بنک محکمہ فنانس کراچی کی جانب سے تنخواہوں کی مد میں پیرول جمعہ رات کو دیر سے موصول ہونے پر ہندو سرکاری ملازمین کو ہولی کی پیشگی تنخواہیں نہ مل سکیں اس ضمن میں ہندو ملازمین ہولی کی تنخواہوں کیلئے اپنے چیک لیکر نیشنل بنک سے ہولی کی تنخواہیں لینے کے لئے پہنچے جس پر بنک کے عملے نے انہیں یہ کہا کہ محکمہ فنانس کراچی کی جانب سے پیرول رات کو دیر سے موصول ہونے کے باعث تنخواہیں آج 22 مارچ بروز جمعہ کو شام 6 بجے کے بعد اکاؤنٹ ہولڈرز کے اکاؤنٹ میں آجائیں گی اور وہ اپنے اے ٹی ایم کارڈز کے ذریعے اپنی تنخواہیں نکلوا سکتے ہیں دوسری جانب ہولی کا تہوار 24 مارچ بروز اتوار کو ہے ہفتہ اور اتوار کو دو دن سرکاری طور پر تعطیل ہونے کے باعث تمام بنک دو دن بند رہیں گے جس کی وجہ سے جن ملازمین کے پاس اے ٹی ایم کارڈز کی سہولت میسر نہیں ہے وہ چیک کے ذریعے اپنی تنخواہیں حاصل کرنے سے محروم رہیں گے اس حوالے سے ہندو برادری کے سرکاری ملازمین کا کہنا ہے کہ تنخواہوں کے بغیر ہولی کے تہوار کا مزا ہی خراب ہو گیا ہے اگر حکومت چند روز قبل پیشگی تنخواہیں ادا کرنے کا حکم دے دیتی تو ہم اپنے بچوں کے ساتھ خوشی سے ہولی کا تہوار مناتے***