افسوس کا مقام ہے کہ بھارتی ظلم و ستم پر عالمی برادری خاموش ہے:عثمان بزدار

اپنےا یک بیان میں وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارکا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں 136روزسے انسانیت سسک رہی ہے،بھارت کے ظالمانہ ہتھکنڈوں کے باعث ساڑھے چار ماہ سے مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام بنیادی حقوق اورضروریات زندگی سے محروم ہیں،جو وادی کبھی جنت تھی آج جہنم سے بھی بدتر ہوچکی ہے،بھارتی فوج مقبوضہ کشمیر کے عوام پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑرہی ہے،بھارت نے ریاستی دہشت گردی کے ذریعے معصوم کشمیری عوام پر عرصہ حیات تنگ کیا ہوا ہے،بھارت کشمیری رہنماؤں کو قید کر کے بھی تحریک آزادی کا گلا نہیں گھونٹ سکا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ بھارتی ظلم و ستم کے باوجود کشمیری عوام میں آزادی کی تڑپ کو مزید جلا بخشی ہے،افسوس کا مقام ہے کہ بھارتی ظلم و ستم پر عالمی برادری خاموش ہے، مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزیوں پر عالمی برادری کے ضمیر کو جاگنا ہوگا،پاکستانی قوم کشمیری عوام کے ساتھ کھڑی تھی،ہے، اور رہے گی،کشمیری عوام کی برسوں سے جاری پرامن تحریک صرف حق خود ارادیت کیلئے ہے،مسئلہ کشمیر حل ہوئے بغیر خطے میں امن اور استحکام پیدا نہیں ہوسکتا،کشمیر کا بچہ بچہ آزادی مانگ رہا ہے۔
یاد رہے کہ جنت نظیر وادی کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤن 136 ویں روز میں داخل ہو گیا ہے۔ خوراک اور ادویات کی شدید قلت برقرار ہے۔واضح رہے کہ 5اگست کو مودی سرکار نے کشمیر کو خصوصی حیثیت دینے والے بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اے کو ختم کر کے مقبوضہ وادی میں کرفیو نافذ کر دیا تھا اور بھارت نے کشمیریوں کی نقل وحرکت پر پابندی عائد کر رکھی ہے۔