وزیراعلیٰ جام کمال سے مناظرے کا جو چیلنج دیا تھا اس پر قائم ہوں

کراچی( پ ر) گوادر اور لسبیلہ سے منتخب رکن قومی اسمبلی و سابق اسپیکر محمد اسلم بھوتانی نے کہا ہے کہ وزیراعلیٰ جام کمال سے مناظرے کا جو چیلنج دیا تھا اس پر قائم ہوں لیکن وزیراعلیٰ اپنے تنخواہ دار غیرمنتخب ترجمانوں کے بجائے براہ راست ایوب اسٹیڈیم میں مناظرہ کریں اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ لسبیلہ میں زمینوں کی بندربانٹ کرنے کی جو کوشش کی گئی ہے اس کے نہ صرف میرے پاس دستاویزی ثبوت ہیں بلکہ دبئی کی وہ جائیدادیں جو انہوں نے الیکشن کمیشن اور ایف بی آر کے گوشواروں میں ظاہر نہیں کیں اس کے ثبوت میرے پاس موجود ہیں غلط حلفیہ بیان کا پردہ فاش کرنے کے لئے تیار ہوں انہوں نے کہا کہ میں پہلے ثبوت ہاتھ میں رکھتا ہوں اس کے بعد چیلنج کرتا ہوں اگر جام کمال صاحب میں کوئی ہمت ہے تو سامنے آئیں نہ صرف لسبیلہ میں ان کے کرتوتوں کے ثبوت دونگا بلکہ دبئی میں ان کی جائیدادوں کے ثبوت بھی موجود ہیں انہوں نے کہا کہ اگر ان ثبوتوں کو چھیڑا گیا تو آئین کی 62/63  شقوں کی زد میں جام کمال باآسانی آسکتے ہیں انہوں نے کہا کہ مناظرے کے چیلنج پر قائم ہوں اگر میں دستاویزی ثبوت نہ دے سکا تو سیاست چھوڑ دونگا ورنہ جام کمال صاحب کو اپنا بوریا بستر گول کرنا ہوگا اسلم بھوتانی نے کہا کہ وزیراعلیٰ کے تنخواہ دار ترجمان کے بیان کی تصیح کرتا چلوں کہ بھوتانی براداران 12 مرتبہ مسلسل اپنے حلقوں سے کامیاب ہوتے چلے آرہے ہیں 1993ء ‘ 2013 اور اب 2018ء کے الیکشن میں جام صاحبان کو بری شکست سے بھی دوچار کر چکے ہیں 2018ء کی شکست وزیراعلیٰ شاید بھول نہیں پائے اس لئے ان کے ترجمان اپنے آقا کی خوشنودی حاصل کرنا چاہتے ہیں لہٰذا میرے نزدیک اس تنخواہ دار غیر منتخب ترجمان کی کوئی حیثیت نہیں مناظرہ کرنا ہے تو وزیراعلیٰ میرے ساتھ مناظرہ کریں میں ان کے سامنے بیٹھ کر لسبیلہ میں زمینوں کو ہتھیانے کے دستاویزی ثبوت اور ایف بی آر اور الیکشن کمیشن میں جمع کروانے والے دستاویزات مصدقہ ثبوت کے ساتھ پیش کرونگا  پھر ہمت ہے تو اس سے کوئی انکار کرکے دکھائے ۔



اپنا تبصرہ بھیجیں