مرغی کو اپنے سامنے ذبح کروائیں ۔تازہ گوشت فروزن گوشت اور پیک کیےگئے نگٹس سے بہتر ہے

مرغی کو اپنے سامنے ذبح کروائیں ۔تازہ گوشت فروزن گوشت اور پیک کیےگئے نگٹس سے بہتر ہے ۔گوشت کو کافی دنوں کے لیے محفوظ رکھنے والی کمپنیاں گوشت کوپیک کرتے وقت ان میں زیادہ سالٹ استعمال کرتی ہیں جو انسانی صحت کے لیے بالآخر نقصان کا سبب بنتا ہے پیک کیےگئے ڈبوں میں نگٹس سمیت دیگر اقسام کے مرغی کے گوشت کا استعمال کسی لحاظ سے بھی تازہ گوشت سے بہتر نہیں ۔18 دسمبر کو ایک نجی ایف ایم ریڈیو کی مورنینگ نشریات کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مرغی کو اپنے سامنے ذبح کروانا چاہیے تازہ گوشت زیادہ مفید ہوتا ہے جو لوگ اپنے بچوں کو مختلف کمپنیوں کے پیک کیےگئے نگیٹس جو مختلف جانوروں کی شکلوں کے بنائے جاتے ہیں کھلاتے ہیں ان میں بہت زیادہ سالٹ ہوتا ہے انہیں زیادہ دنوں کے لیے محفوظ بنانے کی وجہ سے یہ کمپنیاں ان میں سالٹ اور دیگر ایسے اجزاء شامل کرتی ہیں جو بالآخر انسانی صحت کے لیے مضر قرار دیئے جاتے ہیں اسی طرح ان کے ساتھ  کھانے میں جو کولڈڈرنگ اور سوڈا پیا جاتا ہے وہ بھی کاربوہائیڈریٹس کی وجہ سے صحت کے لیے نقصان دے ثابت ہوتا ہے رپورٹ میں بتایا گیا کہ ایک عام انسان نہ چاہتے ہوئے بھی دن میں چائے کے چمچ کے برابر 17 چمچ چینی اپنے جسم میں شامل کر لیتا ہے جو اس کے لیے مشکلات پیدا کرتی ہیں نمک ہوا چینی یا کاربوہائیڈریٹس یہ سب انسانی صحت کے لیے نقصان دہ ثابت ہوتے ہیں آج کل بریانی کا بڑا چرچا ہے کرکٹ میچوں کے دوران بھی ہر کوئی بریانی بریانی بریانی کی رٹ لگائے بیٹھا ہے بریانی کے ساتھ کولڈرنک اور سافٹ ویئر پی جاتی ہے یہ عجیب کمبینیشن ہے جیسے طبی ماہرین بھی تنقید کا نشانہ بنا  چکے ہیں اسی طرح شادی بیاہ کے کھانوں اور دیگر دعوت و پارٹیوں اور مواقع پر مرغن کھانوں کے ساتھ کولڈرنک کا استعمال بھی انسانی صحت کے لیے نقصان دہ قرار دیا گیا ہے یہ موٹاپا بھی لاتا ہے اور مختلف بیماریوں کا باعث بھی بنتا ہے ۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ والدین کو چاہیے کہ اپنے بچوں کو نگٹس سمیت ڈبے میں پیک کیےگئے چکن کے مختلف آئٹمز کے استعمال سے پرہیز کریں زیادہ بہتر ہے کہ زندہ مرغی لے کر آئے اس کو خود سے بات کریں یا ذبح کروائیں اور اپنے بچوں کو تازہ مرغی کا گوشت کھلائیں ڈبوں میں پیک کیا گیا مرغی کا گوشت یا کافی دنوں تک فروزن گوشت جیسے فریج اور فریزر میں رکھا جاتا ہے یہ بڑے بڑے شاپنگ مالز میں اور فوڈ چینز میں استعمال ہو رہا ہے اس کے استعمال سے اپنے بچوں کو ممکن حد تک بچائیں فروزن گوشت کے فوائد کم اور نقصانات زیادہ ہیں یہ جسم کے ہارمونز کے لیے نقصان دے ہیں خاص کر بچیوں کی صحت کے لیے نقصان دہ ہیں ۔دوسری جانب سوشل میڈیا پر بھی ایسی بہت سی پوسٹس  گردش کر رہی ہیں یہ میں کاربوہائیڈریٹس کے استعمال کولڈرنک کے استعمال اور فروزن گوشت کے استعمال سے پرہیز کرنے پر زور دیا جاتا ہے ۔پاکستان کی اکثر مشہور ماڈل گرلز اور اداکار اور آرٹسٹوں نے اس بات پر زور دیا ہے کہ اچھی صحت کے لئے کولڈرنگ اور زیادہ میٹھی اور نمکین چیزوں سے وہ پرہیز کرتے ہیں اس لیے ان کی فٹنس برقرار  اور شخصیت پر کشش رہتی ہے اور وہ اپنا وزن کنٹرول میں رکھتے ہیں خاص طور پر خوبصورت اور پرکشش جسمانی خدوخال رکھنے والی اداکاراؤں اور فنکاروں نے اپنے انٹرویوز میں بتایا ہے کہ وہ کولڈرنک سے دور رہتی ہیں اور فروزن کھانے اور مرغن کھانوں سے بھی خود کو بچاتی ہیں شادی بیاہ کی دعوتوں اور پارٹیوں میں کم سے کم چیزیں کھاتی ہیں اسی لیے سلم اور سمارٹ رہتی ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں