سعودی عرب ۔ 2030 کے ویژن کی طرف گامزن

جدہ (امیر محمد خان سے)  جدہ میں جاری پانچویں بین الاقوامی کتب میلے میں اب تک ریکارڈ کی جانے والی زائرین کی تعداد ایک لاکھ 24ہزار سے تجاوز کر چکی ہے۔انٹرنیشنل کتب میلے کا افتتاح گذشتہ ہفتے گورنر مکہ شہزادہ خالد الفیصل نے کیا تھا۔کتب میلہ گزشتہ 4 برس سے منعقد کیاجاتا ہے جس میں دنیا بھر سے ناشران اور مصنفیں شرکت کرتے ہیں۔  امسال 40 ممالک سے 400 سے زائد ناشران اس کتب میلے میں شرکت کر رہے ہیں۔میلہ جدہ کے ساحلی علاقے ابحر جنوبی میں لگایا گیا ہے جو 30 ہزار مربع میٹر رقبے پر محیط ہے۔ کتب میلے میں مختلف طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد شرکت کر رہے ہیں جبکہ میلے میں ثقافتی پروگرام بھی پیش کیے جاتے ہیں۔کتب میلے میں خصوصی کارنر مصنفین کے لیے مخصوص کیا گیا ہے جہاں سعودی عرب سمیت مختلف ممالک کے مصنفین موجود ہیں جوکتب کے شائقین کی فرمائش پر  دستخط بھی کرتے ہیں جبکہ وہ اپنے تجربات سے بھی لوگو ں کو آگاہ کرتے ہیں۔کتب میلے میں آنے والوں کا کہنا تھا کہ ہر سال اسی مقام پر یہ میلہ منعقد کیا جاتا ہے جو بہترین اقدام ہے۔ ایک شہری کا کہنا تھا کہ وہ گذشتہ 3 برس سے اس میلے میں شرکت کر رہا ہے۔ میلے کا انتظار بڑی شدت سے رہتا ہے۔ایک اور کتب بین کا کہنا تھا کہ کتب میلے کا انعقاد بہترین اقدام ہے اس سے ہمیں دنیا بھر کے ادیبوں اور مصنفین سے ملاقات بھی ہو جاتی ہے اور کتابوں کے بارے میں بھی کافی معلومات حاصل ہوتی ہیں۔واضح رہے رواں سال کتب میلے میں 3 لاکھ 50 ہزار سے زائد عنوانات پر مشتمل کتب رکھی گئی ہیں جبکہ سعودی عرب سمیت مختلف ممالک سے  200 سے زائد مصنفین بھی میلے میں شرکت کررہے ہیں۔میلے میں 50 سے زائد مختلف ثقافتی سرگرمیاں بھی پیش کی جارہی ہیں جن سے میلے میں آنے والے شائقین کافی لطف اندورز ہو تے ہیں۔ میلہ ساحل کے پرفضا مقام پر وسیع و عریض خیمے میں  لگایا گیا ہے۔ جدہ  بندر گاہ کی جدید خطوط پر  استوار کرنے کا معاہدہ  دبئی انٹرنیشنل سی پورٹس ایک معاہدے کے تحت جدہ اسلامی بندرگاہ پر کنٹینرز سٹیشن جدید خطوط پر استوار کرنے میں تعاون کرے گی۔ اس حوالے سے تفصیلات طے پاگئی ہیں۔سعودی اخبار کے مطابق   سعودی عرب میں ٹرانسپورٹ کی نجکاری کی نگراں کمیٹی نے دبئی انٹرنیشنل سی پورٹس اور بوابۃ البحر الاحمرسٹیشن کمپنیوں کے ساتھ جدہ اسلامی بندرگاہ میں کنٹینرزسٹیشنوں کو جدید خطوط پر استوار کرنے اور انہیں چلانے کے معاہدوں کی منظوری دے دی۔سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی موجودگی میں فروری 2019 کے دوران سی پورٹس جنرل اتھارٹی ’موانی‘ نے مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط کیے تھے۔ نئی منظوری انہی یادداشتوں پر عمل درآمد کے حوالے سے دی گئی ہیاس کے بموجب لاجسٹک خدمات اور قومی صنعت کو فروغ دینے کے پروگرام سے متعلق وہ اہداف پورے ہوں گے جو سعودی وژن 2030 میں متعین کیے گئے ہیں۔رواں ماہ بی او ٹی کے معاہدوں پر دستخط ہوں گے۔ دبئی انٹرنیشنل سی پورٹس اور بوابتہ البحر الاحمر جدہ اسلامی بندرگاہ پر کنٹینرز سٹیشن جدید خطوط پر استوار کرنے کے ساتھ نظم و نسق بھی دیکھے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں