آصف زرداری کی رہائی ڈیل کا نتیجہ نہیں :سعید غنی

پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ آئی جی سندھ کے تبادلے سے متعلق ابھی تک بات نہیں ہوئی،اگر کوئی بھی آئی جی غلط بات کرے گاتو ہمارا فرض ہے کہ اس کو لوگوں کے سامنے لائیں ، جہاں عوام کو گمراہ کیا جائے گا وہاں ہمارا حق ہے کہ عوام کو حقائق بتائیں۔ان کا کہنا تھاکہ ہم وزیراعظم عمران خان کی انتقامی کارروائی سے نہیں گھبرائے،میں نہیں سمجھتا کہ ہم آئی جی کے ایک خط سے گھبرا جائیں گے ،آئی جی سندھ کو تبدیل کرنے کے حوالے سے ہمارا کوئی منصوبہ نہیں ہے ،آئی جی سندھ حکومت کے خلاف عوامی رائے کا حصہ نہ بنیں،چاہتے ہیں کہ آئی جی سندھ قانون کے مطابق اپنی ذمہ داریاں سر انجام دیں۔آئی جی سندھ کسی کے اشارے پر سندھ حکومت اور پولیس تعلقات کو تماشا بنانا چاہتے ہیں،پنجاب میں کئی آئی جی تبدیل ہو جاتے ہیں مگر کوئی ایشو نہیں ہوتا،آئی جی اسلام آباد کو تو بھینس چوری کے معاملے پر ہٹادیا گیا،مگر کسی نے ایشو نہیں بنایا۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ سابق صدر و شریک چیئرمین آصف زرداری کی رہائی کسی ڈیل کا نتیجہ نہیں،اگر کوئی سمجھتا ہے کہ رہائی ڈیل کا نتیجہ ہے تو عمران خان سے پوچھ لے،عمران خان کہتے تھے کہ میں نے پکڑایا تو پھر چھوڑا بھی خود ہو گا،عدالت نے کہا کہ جب تک کسی پر الزام ثابت نہ ہو جائے وہ بے گنا ہے ،5 سے 6 ماہ بعد انصاف کو ڈیل کہنا زیادتی ہے ۔
انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم نے صوبے کا بل پھر اسمبلی میں پیش کیا،ایم کیو ایم نے سندھ میں دو صوبوں کی بات کی ،یہ بل کسی اسمبلی سے پاس نہیں ہو سکتا،ایم کیو ایم کا بل سندھ میں انتشار پھیلانے کی سازش ہے ۔