ٹاپ جوڈوکا شاہ حسین شاہ کی نظریں اولمپکس میڈ ل پر

پاکستان کے ٹاپ جوڈوکا شاہ حسین شاہ نے ساؤتھ ایشین گیمز میں گولڈ میڈل جیتنے کے بعد اب نظریں اولمپکس میں میڈل جیتنے پر جمالی ہیں۔

باکسنگ لیجنڈ حسین شاہ کے بیٹے کا کہنا ہے کہ ان کی خواہش ہے کہ وہ اولمپکس مقابلوں میں اپنے والد کی طرح پاکستان کیلئے میڈل لائیں، اُنہیں محسوس ہوتا ہے کہ اس بار وہ میڈل جیتنے کی پوزیشن میں ہیں۔

کراچی میں جیو نیوز سے خصوصی گفتگو میں شاہ حسین شاہ نے کہا کہ وہ جاپان میں ٹریننگ کررہے ہیں، ٹاپ جوڈوکاز کے ساتھ ٹریننگ کرنا اور کوچ رکھنا، یہ سب آسان نہیں، کوئی بھی ایتھلیٹ اکیلا اولمپکس میں میڈل نہیں جیت سکتا، اس کیلئے حکومت، فیڈریشن اور عوام، سب ہی کو اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہوتا ہے۔

شاہ حسین شاہ نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ انہیں اب تک حکومت کی جانب سے کوئی سپورٹ نہیں ملی لیکن وہ اس بارے میں زیادہ سوچتے نہیں اور ان کی توجہ صرف ٹریننگ پر ہے۔

ایک سوال پر کامن ویلتھ گیمز اور ایشین جوڈو چیمپئن شپ میں پاکستان کیلئے میڈلز جیتنے والے جوڈوکا نے کہا کہ ریو اولمپکس میں انہیں اندازہ نہیں تھا کہ اولمپکس کیا ہوتے ہیں، لیکن اب انہیں اس کے معیار کا بخوبی اندازہ ہوگیا ہے۔

شاہ حسین شاہ اولمپکس میں کونٹی نینٹل کوٹے پر جگہ بنانے والوں کی فہرست میں آچکے ہیں تاہم مئی 2020 تک یہ پوزیشن برقرار رکھنا بھی ضروری ہے، شاہ کی نظریں اب بھی براہ راست کوالیفکیشن پر ہیں اور اس کو حاصل کرنے کیلئے انہیں زیادہ سے زیادہ ٹورنامنٹس کھیلنا ضروری ہیں۔