پی سی بی معاملات وزارت بین الصوبائی رابطہ سے کابینہ ڈویژن منتقل

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے معاملات وزارت بین الصوبائی رابطہ سے کابینہ ڈویژن منتقل کردیے گئے۔

نگران حکومت نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے معاملات کابینہ ڈویژن کو منتقل کیے اور اس کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا۔

پی سی بی اب براہ راست وزیراعظم آفس کے ماتحت کام کرے گا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ اب وزارت بین الصوبائی رابطہ کو جوابدہ نہیں ہوگا اور اس کے بعد سیکرٹری وزارت بین الصوبائی رابطہ بھی پی سی بی بورڈ آف گورنرز کے رکن نہیں رہے
=====================

رزاق نے گلگت سے تعلق رکھنے والے کرکٹرز کو پی ایس ایل میں آنے کیلئے کیا مشورہ دیا؟
پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق آل راؤنڈر عبد الرزاق کا کہنا ہے کہ گلگت کے اچھے کھلاڑیوں کو چاہیے کہ وہ پی ایس ایل میں شمولیت کیلئے اسلام آباد، پنڈی یا کراچی جیسے شہروں میں منتقل ہوجائیں۔

جیونیوز کے پروگرام ہارنا منع ہے میں گلگت سے تعلق رکھنے والے ایک نوجوان نے سابق آل راؤنڈر سے سوال کیا کہ پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل ) میں گلگت کے کھلاڑی نظر نہیں آتے اس کی وجہ کیا ہے ؟

سوال کے جواب میں عبد الرزاق کا کہنا تھا کہ پی ایس ایل کیلئے گلگت کے کھلاڑیوں کو شامل کرنے کی بات ہوئی تھی لیکن گلگت کے کھلاڑی کبھی پی ایس ایل کھیلنے نہیں آئے۔

انہوں نے کہا کہ گلگت میں کرکٹ کھیلی جاتی ہے اسی طرح پاکستان کرکٹ بورڈ کا بھی گلگت میں کرکٹ اسٹیڈیم بنانے کا ارادہ ہے لیکن پی ایس ایل میں شمولیت کیلئے گلگت کے اچھے کھلاڑیوں کو مشورہ ہے وہ کراچی یا اسلام آباد، پنڈی یا کے پی منتقل ہوجائیں، اس طرح ان کے پی ایس ایل میں شمولیت کے راستے آسان ہوجائیں گے۔

طالب علم کو سمجھانے کیلئے عبد الرزاق نے اپنی مثال دیتے ہوئے کہا کہ میں اپنے کرکٹ کیرئیر کے دوران شاہدرہ میں رہتا تھا لیکن مجھے کرکٹ کھیلنے 7 کلو میٹر دور کا راستہ طے کرکے لاہور آنا پڑتا تھا تو آپ سمجھ سکتے ہیں جب اتنی سی دور کیلئے کرکٹ نہیں تو گلگت میں کیسے ہوگی۔