سروسز انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کے ڈائریکٹر ایڈمن ڈاکٹر عامر مفتی مدت ملازمت مکمل ہونے پر ریٹائرڈ ہوگئے

لاہور( مدثر قدیر )سروسز انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کے ڈائریکٹر ایڈمن ڈاکٹر عامر مفتی مدت ملازمت مکمل ہونے پر ریٹائرڈ ہوگئے ۔33سال سے زائد عوامی خدمت کا سفر اختتام پزیر ۔ڈاکٹر عامر مفتی نے 1987میں ایم بی بی ایس کا امتحان پاس کرنے کے بعد اپنی ملازمت کا آغاز 1991میں بی ایچ یو اوکاڑ ہ سے کیا جس کے بعد 1998میں آپ کوجناح ہسپتال لاہور میں ڈی ایم ایس تعینات کیا گیا ۔ڈاکٹر عامر مفتی نے لاہور کے تین بڑے ہسپتالوں لاہور جنرل ہسپتال ،گورنمنٹ ٹیچنگ ہسپتال شاہدرہ اور سروسز ہسپتال لاہور میں میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کی حثیت سے فرائض سرانجام دیے اور مریضوں کو حکومتی احکامات پر صحت کی سہولیات فراہم کرنے میں معاونت کی ،کرونا کے دور میں کرونا ویکسین کی عوام تک رسائی کا معاملہ ہو یاں پھر سروسز ہسپتال میں مریضوں کی انسولین کا مسئلہ ڈاکٹر عامر مفتی تمام عوامی مسائل پر گہری نظر رکھتے تھے ۔ 2022 میں انھیں ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز پنجاب میں ڈائریکٹر کی حثیت سے تعینات کیا گیا اور گزشتہ برس کے اختتام پر انھیں ڈائریکٹر ایڈمن سروسز ہسپتال تعینات کیا گیا جہاں سے گزشتہ روز اپنی مدت ملازمت مکمل کرنے کے بعد ریٹائرڈ ہوئے ۔
=======================

لاہور( جنرل رپورٹر )پنجاب حکومت نے لاہور جنرل ہسپتال کے امیر الدین میڈیکل کالج کے نرسنگ کالج و ہاسٹل کی تعمیر و مرمت کیلئے مجموعی طور پر آٹھ کروڑ 86 لاکھ 27 ہزار روپے کے فنڈز جاری کر دیے ہیں ان میں سے سات کروڑ 60 لاکھ روپے نرسنگ ہاسٹل جبکہ ایک کروڑ 26 لاکھ روپے کی رقم نرسنگ کالج پر خرچ ہو گی۔ یہ بات پرنسپل امیر الدین میڈیکل کالج پروفیسر ڈاکٹر محمد الفرید ظفر نے نرسنگ کالج کے دورے کے دوران نرسنگ انسٹرکٹرز و طالبات سے گفتگو کرتے ہوئے بتائی۔ اس موقع پر پرنسپل نرسنگ کالج مسز میمونہ ستار بھی موجود تھیں۔
پروفیسر ڈاکٹر محمد الفرید ظفر نے کہا کہ جنرل ہسپتال کے نرسنگ کالج و ہاسٹل کی عمارتیں 1962 میں تعمیر ہوئی تھی۔ نصف صدی سے زیادہ پرانی ان عمارتوں کی دور حاضر کے تقاضوں کے مطابق تعمیر نو کے لیے فنڈز کی اشد ضرورت تھی انہوں نے کہا کہ اس منصوبے کی تکمیل سے جہاں ہسپتال کے نرسنگ سٹاف کو بہترین رہائشی سہولیات میسر آئیں گی وہیں نرسنگ کالج کی توسیع اور مرمت کے بعد ان طالبات کو بہترین تعلیمی ماحول اور ضروری سہولیات سے مزین لیکچر رومز و لائبریری بھی دستیاب ہوگی۔ پروفیسر الفرید ظفر نے کہا کہ ہسپتالوں میں معیاری طبی سہولیات کی فراہمی میں نرسنگ سٹاف کا کلیدی کردار نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔نرسنگ کالج میں سہولیات میں اضافے سے نہ صرف وہاں درس و تدریس کا معیار بلند ہوگا بلکہ فیکلٹی ممبرز بھی زیادہ موثر طریقے سے طالبات کوزیور تعلیم سے آراستہ کر سکیں گے۔انہوں نے نرسنگ کالج کے معائنے کے دوران طالبات سے گفتگو کرتے ہوئے انہیں تلقین کی کہ وہ پوری دلجمی اور محنت سے اپنی پیشہ ورانہ تعلیم و تربیت پر توجہ مرکوز کریں کیونکہ نرسنگ واحد ایسا مقدس شعبہ ہے جس میں تربیت کے ساتھ ساتھ وظیفہ بھی ملتا ہے علاوہ ازیں نرسنگ طالبات کو ہاسٹل میں مفت رہائش کی سہولت بھی فراہم کی جاتی ہے۔ مزید یہ کہ وہ اپنے چار سالہ ڈگری پروگرام کی تکمیل پر براہ راست گریڈ 16 کی نوکری پر فائز ہو جاتی ہیں۔ ان کا شعبہ دکھی انسانیت کی خدمت پر مامور ہے جس کی بدولت انہیں نہ صرف دنیا میں خلق خدا کی دعائیں ملتی ہیں بلکہ آخرت بھی سنور جاتی ہے۔
=======================

لاہور(جنرل رپورٹر )آل گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس پاکستان و پنجاب ٹیچرز یونین کے مرکزی صدر چوہدری سرفراز، رانا لیاقت، سعید نامدار، رانا انوار، نادیہ جمشید، ملک مستنصر باللہ اعوان، مصطفیٰ سندھو ،آغا سلامت، اسلم گھمن ،چوہدری محمد علی، میاں ارشد، رانا الیاس، چوہدری عباس، طارق زیدی، مرزا طارق، رانا خالد، طاہر اسلام، غفار اعوان، نذیر گجر، اختر بیگ، مصطفیٰ وٹو ودیگر نے کہا ہےکہ لیو انکیشمنٹ رولز میں غاصبانہ ترامیم اساتذہ سمیت سرکاری ملازمین کے معاشی حقوق پر ڈاکہ ہے ان ظالمانہ ترامیم سے ہر سرکاری ملازم کو ریٹائرمنٹ پر لاکھوں روپے کا نقصان ہو گا جس سے سرکاری ملازمین ریٹائرمنٹ کے بعد کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہوں گے سرکاری ملازم ساری سروس اس آس و امید پر گزار دیتا ہے کہ ریٹائرمنٹ پر ملنے والی رقم سے بقیہ ماندہ زندگی احسن طریقے سے گزار سکے گا لیکن لیو انکیشمنٹ رولز میں کی گئیں ظالمانہ ترامیم سے ملازمین کو جان کے لالے پڑے ہیں اور عدم تحفظ کا شکار ہو چکے ہیں لہذا نگران وزیر اعلیٰ پنجاب محسن نقوی صاحب اساتذہ سمیت سرکاری ملازمین پر رحم کرتے ہوئے لیو انکیشمنٹ رولز میں کی گئیں ظالمانہ ترامیم کو واپس لے کر سرکاری ملازمین پر احسان عظیم فرمائیں