صحت دشمن عناصرکا ایک اور حربہ بے نقاب، زائدالمیعاد اشیاء فروخت کرنے پر 2گودام سیل

صحت دشمن عناصرکا ایک اور حربہ بے نقاب، زائدالمیعاد اشیاء فروخت کرنے پر 2گودام سیل زائدالمیعاد اشیاء کی خرید و فروخت قانوناً جرم، سپلائی کرنیوالے 3 تیار ٹرک ضبط23 ہزار کلو نوڈلز، 4 ہزار کلو مصالحہ جات، 600کلو چاکلیٹ اوردیگر اشیاء برآمد، مقدمہ درجمختلف پروڈکشن یونٹس کا زائدالمیعاد مال سستے داموں خرید کر گوداموں میں سٹور کیا جاتا تھا۔ڈی جی فوڈ اتھارٹیوزیر اعظم کے ویژن کے مطابق ملاوٹ سے پاک نئے پاکستان کی تشکیل کے لیے پنجاب فوڈ اتھارٹی سرگرم ہے۔عرفان میمنؒلاہور10دسمبر:ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈاتھارٹی عرفان میمن کی سربراہی میں فوڈ سیفٹی ٹیموں نے زائدالمیعاد اشیائے خورونوش کی سپلائی ناکام بناتے ہوئے بھاری مقدار میں سامان برآمد کر لیا۔تفصیلات کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی نے صحت دشمن عناصرکا ایک اور حربہ بے نقاب کردیا ہے۔ ڈی جی فوڈ اتھارٹی کی سربراہی میں دینہ ناتھ پھول نگر میں واقع یامین گودام اور دین محمد گودام پر چھاپہ مارتے ہوئے بھاری مقدار میں زائدالمیعاد اشیاء کی موجودگی پر دونوں گودام سیل کر دیے گئے۔سپلائی کے لیے تیار ایکسپائر نوڈلز، مصالحہ جات اور چاکلیٹ کا سٹاک بھی موقع پر پکڑا گیا۔بچوں کی پسندیدہ ایکسپائر اشیائے خورونوش کو دوبارہ پیک کرکے سپلائی کیا جانا تھا۔کارروائی کے دوران23 ہزار کلو نوڈلز، 4 ہزار کلو مصالحہ جات اور 600کلو چاکلیٹ برآمد کرتے ہوئے مالکان کیخلاف مقدمہ درج کروا دیا گیا ہے۔مزید برآں سپلائی کے لیے تیار3ہزار کلو ایکسپائر نوڈلزسے بھرا ٹرک بھی قبضہ میں لے لیا گیا ہے۔اس حوالے سے ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا تھا کہ مختلف پروڈکشن یونٹس کا زائدالمیعاد مال سستے داموں خرید کر گوداموں میں سٹور کیا جاتا تھا۔زائد المیعاد نوڈلز، مصالحہ جات اور چاکلیٹ کو خرید کر سپلائی کے لیے دوبارہ نئی پیکنگ لگائی جاتی تھی۔عرفان میمن کامزید کہنا تھا کہ پیکنگ سے قبل ایکسپائر نوڈلز اور مصالحہ جات کو بغیر ڈھانپے ہی کھلا زمین پررکھا گیا تھا۔مدت ِاستعمال ختم ہونے پر اشیائے خورونوش میں انسانی صحت کے لیے مضر ثابت ہو جاتے ہیں۔انہوں نے واضح کیا کہ زائد المیعاد اشیائے خورونوش کی خرید و فروخت قانوناً جرم ہے۔اشیائے خورونوش کی تیاری میں ملاوٹ اور دھوکہ دہی کرنے والوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔وزیر اعظم کے ویژن کے مطابق ملاوٹ سے پاک نئے پاکستان کی تشکیل کے لیے پنجاب فوڈ اتھارٹی سرگرم ہے۔                                        ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

اپنا تبصرہ بھیجیں