ایک لٹر ڈیزل پر 45 روپے 75 پیسے کا ٹیکس وصول کیا جارہا ہے

پاکستان میں پٹرول کی اصل قیمت 78 روپے 29 پیسے ہے تاہم پاکستان کی موجودہ حکومت نے فی لٹر 35 روپے سات پیسے ٹیکس عائد کر رکھا ہے جس کی وجہ سے صارفین کو ایک لٹر ایک سو 13 روپے 99 پیسے میں فروخت کیا جا رہا ہے۔ اسی طرح ایک لٹر ڈیزل پر 45 روپے 75 پیسے کا ٹیکس وصول کیا جارہا ہے۔ یہ انکشاف قومی اسمبلی میں حکومت کی جانب سے فراہم کی گئی دستاویزات میں کیا گیا ہے۔

پاکستان 24 کو حاصل دستاویز کے مطابق حکومت فی لیٹر ڈیزل پر 45 روپے 75 پیسے ٹیکس وصول کر رہی ہے جبکہ مارکیٹ میں ڈیزل 125 روپے ایک پیسہ فی لیٹر فروخت ہورہا ہے۔ اسی طرح پیٹرول پر 35 روپے سات پیسے ٹیکس وصول کیا جاتا ہے جبکہ انصافی دور حکومت میں پیٹرول ایک سو تیرہ روپے ننانوے پیسے فی لیٹر فروخت ہورہا ہے۔
اسی طرح اس پر بیس روپے جبکہ ای ڈی او پر 14 روپے 98 پیسے ٹیکس وصول کیا جارہا ہے۔ حاصل دستاویز میں بتایا گیا ہے کہ ملک کی نمو اور ترقی کیلئے میزانیائی ریونیو کے اہداف پورے کرنے کیلئے پیٹرولیم مصنوعات پر ٹیکس عائد کیا جاتا ہے اس لیے ٹیکسز ختم نہیں کیے جاسکتے تاہم عوام کو ریلیف دینے کیلئے قابل اطلاق ٹیکسز میں کمی کرکے حکومت اکثر اوقات تیل کی قیمتوں میں کمی کرتی ہے – پیٹرول کی قیمت میں کمی کی ایک حالیہ مثال موجود ہے جس میں حکومت نے چار آنے فی لیٹر پیٹرول کی قیمت میں کمی کی ہے. تحریک انصاف اپوزیشن جماعت کے طور پر پیٹرولیم مصنوعات پر عائد زائد ٹیکسز کیخلاف ہمیشہ آواز اٹھاتی رہی ہے -رپورٹ: جہانزیب عباسی Pakistan24.tv-report


اپنا تبصرہ بھیجیں