ندا ڈار کو انگلینڈ کیخلاف بہتر کارکردگی کی امید

پاکستان ویمنز کرکٹ ٹیم کی آل راؤنڈر ندا ڈار نے انگلینڈ کے خلاف بہتر کارکردگی کی امید ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ کھلاڑیوں کے فٹنس لیول میں اضافہ ہوا ہے۔

ایک انٹرویو میں ندا ڈار کا کہنا ہے کہ قومی خواتین کرکٹ ٹیم کی اکثریت اس سے قبل انگلینڈ کےخلاف میدان میں نہیں اتری جس کے باعث پاکستان ٹیم ایک روزہ سیریز میں حریف ٹیم کو سرپرائز کرنے کی اہلیت رکھتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ قومی ویمنز ٹیم کی فیلڈنگ میں بہتری آئی ہے جبکہ کھلاڑیوں کے فٹنس لیول میں بھی خاطر خواہ اضافہ دیکھا گیا ہے۔

آل راؤنڈر ندا ڈار اب تک پاکستان کی جانب سے کل 167 ایک روزہ اور ٹی ٹونٹی میچوں میں شرکت کرچکی ہیں۔ ندا ڈار ویمنز بگ بیش لیگ میں شرکت کرنے والی واحد پاکستانی خاتون کرکٹر ہیں۔

قومی خواتین کرکٹ ٹیم کو آئی سی سی ویمنز چیمپئن شپ میں شامل تین ایک روزہ میچوں کی میزبانی کرنی ہے۔

9 دسمبر سےملائیشیا کے شہر کوالالمپور میں شروع ہونے والی سیریز میں پاکستان کا مقابلہ انگلینڈ سے ہوگا۔

قومی ویمنز ٹیم آئی سی سی ویمنز چیمپئن شپ کے پوائنٹس ٹیبل پر پانچویں اور انگلینڈ کی خواتین کرکٹ ٹیم دوسرے نمبر پر موجود ہے۔ سیریز میں کامیابی قومی ویمنز ٹیم کو نیوزی لینڈ میں شیڈول آئی سی سی ویمنز کرکٹ ورلڈکپ 2020 میں رسائی کا براہ راست موقع فراہم کرسکتی ہے