پرویزخٹک ٹائپ لوگوں کو پی ٹی آئی میں بھیجا گیا-وزیراعظم کا حامد خان کے پارٹی مخالف بیانات کا نوٹس

وزیراعظم عمران خان نے سینئر قانون دان حامد خان کے پارٹی مخالف بیانات کا نوٹس لے لیا، حامد خان کی پارٹی رکنیت معطل کردی گئی، حامد خان کو جواب طلبی کیلئے شوکاز نوٹس جاری کردیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف نے سینئر رہنماء حامد خان پارٹی پالیسی کے خلاف میڈیا پر بیانات کا نوٹس لے لیا ہے۔
وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پرحامد خان کی ابتدائی طور پر پارٹی رکنیت معطل کردی گئی ہے۔ حامد خان کو شوکاز نوٹس بھی جاری کیا گیا ہے۔ حامد خان کو شوکاز نوٹس تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری جنرل عامرکیانی نے جاری کیا۔ شوکاز نوٹس میں حامد خان کیخلاف چارج شیٹ کے مطابق آپ نے میڈیا میں بیانات کے ذریعے پارٹی پرغلط الزام لگائے
آپ کے بیانات سے پارٹی ساکھ کو نقصان پہنچا۔
واضح رہے گزشتہ دنوں لاہور سے پی ٹی آئی کے سینئر رہنماء حامد خان میڈیا پر اپنی حکومت اور پارٹی کی پالیسیوں پرتنقید کرتے ہوئے کہا کہ پرویزخٹک ٹائپ لوگوں کو پی ٹی آئی میں بھیجا گیا، پرویز خٹک کو ایجنسیوں نے پی ٹی آئی میں بھیجا تھا، ایسے لوگوں کا نہ تو ماضی کلین ہے اور نہ ہی پارٹی نظریے سے اتفاق کرتے ہیں،عدالتی فیصلہ حکومت کیلئے باعث شرمندگی ہے۔
اسی طرح حامد خان نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے معاملے پر کہا کہ ماضی میں جنرلز کی باربارایکسٹینشن نے ملک کوڈیل ریل کیا۔ ایوب خان کو 2 بار مدت ملازمت میں توسیع ملی، بعد میں انہوں نے مارشل لاء لگا دیا، ضیاء الحق مارشل لاء لگا کر اپنے آپ کو باربار مدت ملازمت میں توسیع دیتا رہا۔ مشرف نے بھی یہی کام کیا۔ پیپلزپارٹی پر دباؤ ڈال کر کیانی نے بھی توسیع لی۔ حامد خان نے کہا کہ  یہ اچھا ہے ایک بار اس کا فیصلہ ہوجائے



اپنا تبصرہ بھیجیں