ایڈز کے عالمی دن کے موقع پر حکومت کا نیشنل ایکشن پلان شروع کرنے کا فیصلہ

وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر طفر مرزا نے کہا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان کے دو مقاصد ہیں، استعمال شدہ ٹیکوں پر مکمل پابندی اور سکریننگ کے بغیر انتقال خون کا راستہ بند کرنا۔

انہوں نے بتایا کہ آئندہ سال کے وسط میں ملک کے تمام نجی اسپتالوں میں خود بخود ضائع ہو جانے والے ٹیکے استعمال ہوں گے، یہ ایسی سرنجیں ہوتی ہیں جو ایک بار استعمال کے بعد قابل استعمال نہیں رہتیں۔ایڈز کا معاملہ سامنے کے بعد وفاق نے نیشنل ٹاسک فورس بنائی تھی، لاڑکانہ میں ایڈز کا معاملہ سامنے آیا تو وفاق اور صوبائی حکومت نے سیاسی اختلاف بھلا کر مل کے کام کیا تھا۔

معاون خصوصی برائے صحت کے مطابق معاملی کی تحقیقات میں سامنے آیا کہ ستر فیصد بیماریاں استعمال شدہ سرنجوں کے باعث پھیلتی ہیں، ڈاکٹر اور اتائی ایک ہی سرنج بار بار استعمال کرتے ہیں