سلمان خان کا گانا بھارت میں متنازع کیوں بنا؟

بھارتی چُل بُل پانڈے سلمان خان کی مشہور سیریز فلم ’دبنگ‘ کی تیسری سیریز ’دبنگ 3‘ ریلیز ہونے سے پہلے ہی بھارت میں ہندو مذہبی تنازعے کا شکار ہوگئی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت کے شہر بنگلور میں مقیم ہندو جنجاگروتی سمیتی این جی او نے بھارتی سینٹرل بورڈ آف فلم سرٹیفیکیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ سلمان خان کی فلم ’دبنگ 3‘ کو جاری کردہ سرٹیفیکیٹ منسوخ کیا جائے
این جی او کا کہنا ہے کہ سلمان خان کی فلم ’دبنگ 3‘ کا گانا ’ہوڑ ہوڑ دبنگ دبنگ‘ میں ہندو مذہب کا مذاق بنایا گیا ہے، اُن کا کہنا ہے کہ فلم کے گانے میں ہندو مذہب کے سادھوؤں کو ایک غلط انداز میں دِکھایا گیا ہے، سادھوؤں کے ہاتھوں میں گٹار ہیں اور وہ ناچ رہے ہیں جس سے ان کی توہین ہو رہی ہے
اُنہوں نے کہا کہ گانے میں سادھوؤں کے علاوہ ہندو مذہب کے بھگوان شری کرشنا، شری رام اور بھگوان شنکر کو بھی دِکھایا گیا ہے۔

دوسری جانب سلمان خان اور ’دبنگ 3‘ کی ٹیم کی جانب سے اِس تنازعے کے حوالے سے ابھی تک کوئی بیان سامنے نہیں آیا ہے جبکہ اِس گانے کی کوریوگرافر شبینہ خان نے اپنا ردِ عمل دیا ہے۔

کوریوگرافر شبینہ خان نے کہا کہ گانے میں گٹار لے کر رقص کرنے والے سادھو اصلی نہیں ہیں بلکہ وہ سب اداکار ہیں اور اُنہوں نے صرف سادھو کا لباس زیب تن کیا ہوا ہے۔

اُنہوں نے کہا کہ یہ پہلی مرتبہ نہیں ہوا ہے کہ سادھو کو اِس طرح سے فلم میں دِکھایا گیا ہے اِس سے قبل بھی بہت سی فلموں میں اداکاروں کو سادھو کے روپ میں دِکھایا گیا ہے اُن پر تو کسی قسم کا کوئی مذہبی تنازع نہیں ہوا۔

واضح رہے کہ اِس سے قبل سلمان خان نے اپنی فلم ’دبنگ 3‘ سے پاکستانی گلوکار راحت فتح علی خان کا گانا ہٹوادیا تھا اور پھر اُس گانےکو دوبارہ بھارتی گلوکار جاوید علی کی آواز میں ریکارڈ کروا کے فلم میں شامل کیا تھا، یہ فلم 13 دسمبر کو ریلیز کی جائے گی