کرکٹ مینجمنٹ ماڈل ساکر جیسا بنایا جائے، رمیز راجہ

سابق قومی کرکٹر اور کرکٹ کے راجہ رمیز راجا نے قومی ٹیم کی حالیہ کارکردگی کو دیکھتے ہوئے ایک نئی بحث چھیڑ دی ہے۔

سوشل میڈیا پر ایک پیغام میں رمیز راجا کا کہنا تھا کہ کرکٹ مینجمنٹ ماڈل کو ساکر (soccer) مینجمنٹ ماڈل جیسا کیوں نہیں بنادیا جاتا جس میں پے در پے شکستیں، یا پھر ایک سے دو ماہ کی بری کارکردگی، کوچنگ اسٹاف کو تبدیل کرنے کے لیے کافی ہوتی ہے
رمیز راجہ ان دنوں آسٹریلیا میں موجود ہیں جہاں وہ پاک آسٹریلیا ٹیسٹ سیریز میں کمینٹری کے فرائض انجام دے رہے ہیںواضح رہے کہ پاکستان ٹیم مینجمنٹ اور کپتان کی تبدیلی کے بعد قومی ٹیم کی پے درپے شکستوں کا سلسلہ جاری ہے اور دورہ آسٹریلیا میں ٹی ٹوئنٹی سیریز میں وائٹ واش کے بعد قومی ٹیم کو اب ٹیسٹ سیریز میں بھی وائٹ واش کا خطرہ لاحق ہوگیا ہے