ہسپتالوں میں ادویات کے بحران اور 9 معصوم بچوں کے جاں بحق ہونے کے واقع کا نوٹس لیا جائے : پاسبان

وزیر اعلیٰ سندھ ہسپتالوں میں ادویات کے بحران اور بڑھتی ہوئی مہنگائی کو کنٹرول کریں:سردار ذوالفقار
تھر میں رواں ماہ 54اور رواں سال 772بچوں کے جاں بحق ہونے کی خبر ایک بہت بڑا المیہ ہے
کراچی :  پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی کراچی کے جنرل سیکریٹری سردار ذوالفقار نے تھر میں سردی سے 9بچوں کی ہلاکت اور ادویات کی خریداری میں تاخیر کے باعث سرکاری ہسپتالوں میں ادویات کے بحران کی خبروں پر شدیدافسوس اور تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ سندھ حکومت معصوم بچوں کی زندگیوں سے نہ کھیلے، تھر کے شہری پہلے ہی بھوک وافلاس کا شکار ہیں اور ہسپتالوں میں ادویات کی قلت انہیں موت کا شکار بنارہی ہے جوکہ معصوم بچوں کا قتل عام کے مترادف ہے۔ پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی کراچی پریس انفارمیشن سیل سے جاری کردہ بیان میں سردار ذوالفقار نے کہا کہ ایک جانب سندھ بھر کے ہسپتالوں میں صوبائی محکمہ صحت کی نااہلی کے باعث پیدا ہونے والے اودیات کے بحران کی خبریں اور ساتھ ہی آپریشن اور سرجری میں استعمال ہونے والے سامان کی بھی قلت منظر عام پرآچکی ہے جو حکومت سندھ کے لئے خطرے کی گھنٹی ہے۔


انہوں نے کہا کہ عوام پہلے ہی بدترین مہنگائی کا شکار ہیں ایسی صورتحال میں سرکاری ہسپتالوں میں ادویات کا بحران عوام کی مشکلات میں مزید اضافے کا سبب بنے گا۔ وزیر اعلیٰ سندھ اس صورتحال کا فوری نوٹس لیں۔ انہوں نے تھر کی صورتحال پر اپنے بیان میں کہا کہ رواں ماہ 54اور رواں سال 772بچوں کے جاں بحق ہونے کی خبر ایک بہت بڑا المیہ ہے۔ تھر کے عوام اپنے معصوم بچوں کو مرتا دیکھ رہے ہیں اور حکومتی ایوانوں میں کوئی مذمتی قراردار تک پیش نہیں ہورہی اور نہ ہی اس افسوسناک المیہ پر توجہ دی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ تھر کے ماؤں کی بددعائیں نہ لیں۔ہسپتالوں میں ادویات کی قلت دور کریں،بہتر علاج معالجے کی سہولیات فراہم کریں اور ادویات کی قیمتوں میں کمی کے ساتھ غذائی قلت اور اشیاء خورنوش کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کے لئے بھی سخت عملی اقدامات کریں #