کبریٰ خان بھی شوبز چھوڑنے کا سوچ رہی ہیں؟

پاکستان شوبز انڈسٹری کو بہترین ڈرامے اور فلمیں دینے والی نامور اداکارہ کبریٰ خان کا کہنا ہے کہ اگر وہ اپنی زندگی میں توازن برقرار رکھ سکیں تو ٹھیک ورنہ شایدوہ یہ سب کچھ چھوڑ کر کہیں اور چلی جائیں۔

اداکارہ کبریٰ خان کا ڈرامہ ’الف‘ جیو پر نشر کیا جارہا ہے جس میں وہ ’حسن جہاں‘ نامی لڑکی کا کردار نبھا رہی ہیں۔ برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کبری خان نے بتایا کہ ڈرامہ ’الف‘ اللّٰہ کا اُن کے لیے تحفہ ہے ، یہ ڈرامہ اس وقت اُن کے پاس آیا جب وہ اپنی زندگی میں پریشان تھیں اور لوگوں کو خود سے دور کررہی تھیں۔ یہاں تک کہ وہ یہ سوچنے لگیں کہ کیا وہ اس انڈسٹری کا حصہ بننا چاہتی ہیں؟
اپنے انٹرویو میں کبریٰ خان نے کہا کہ اُنہیں گزشتہ برس اپنے اندر آنے والی روحانی تبدیلیوں کا احساس ہوا جس کے بعد ان کی زندگی اور سوچ میں تبدیلی آنا شروع ہوئی۔ پیسہ اور مادیت پسندی یہ سب دنیا کا حصہ ہیں لیکن مجھے احساس ہوا کہ میں ان چیزوں کو اپنے ساتھ کہیں بھی نہیں لے جاسکتی۔
انہوں نے کہا کہ ان ایوارڈز کی خدا کے سامنے کوئی اہمیت نہیں اور شاید اسی سوچ کی وجہ سے مجھے احساس ہوا کہ مرتے وقت میں اپنے رب کے سامنے جاتے ہوئے خوفزدہ نہیں ہونا چاہتی۔

اداکارہ نے کہا کہ ایک وقت تھا کہ انڈسٹری میں کام کرتے ہوئے مجھے خواہش تھی کہ میرے ڈرامے دیگر لوگوں سے زیادہ پسند کیے جائیں، لیکن بعد میں میں نے سوچا کہ میرا کسی سے کوئی مقابلہ نہیں اور آج میں جو کچھ بھی ہوں اس پر مطمئن ہوں۔ میں آج 50 ایوارڈز حاصل کرسکتی ہوں، آسکر حاصل کرسکتی ہوں لیکن اگر میں اچھی انسان نہیں تو ان سب کا کوئی مطلب نہیںہے ۔

ڈرامہ ’الف‘میں اپنے کردار حسن جہاں کے بارے میں بتاتے ہوئے کبریٰ خان نے کہا کہ ان کے پاس جب اسکرپٹ آیا تو اُنہیں حسن جہاں کے کردار سے محبت ہوگئی کیونکہ بہت ساری جگہوں پر ان کی زندگی حسن جہاں کے کردار سے جڑی ہوئی ہے۔ لوگ شوبز میں کام کرنے والوں کی زندگیوں کے بارے میں نہیں جانتے، کوئی نہیں جانتا ہم اپنی نجی زندگی میں کیسے ہیں، کتنی عبادت کرتے ہیں، ہمارا اللّٰہ سے تعلق کیسا ہے
انہوں نے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ لوگوں کو ہمارے بارے میں یہ غلط فہمی ہوتی ہے کہ ان کا تعلق شوبز سے ہے تو یہ غلط ہیں کرپٹ ہیں جبکہ یہ سچ نہیں ہے۔ لوگوں کی سوچ شوبز سے وابستہ لوگوں کے بارے میں بہت غلط ہے۔

انٹرویو کے اختتام میں انہوں نے کہا کہ مجھے فن سے محبت ہے۔ میں آج بھی مغربی انداز کے کپڑے پہنتی ہوں، میوزک سنتی ہوں لیکن جب تک آپ کی نیت صحیح ہے اور آخر میں اگر سب کچھ ٹھیک رہا اور مجھے ایسا لگتا ہے کہ میں اپنی زندگی میں توازن برقرار رکھ سکی تو ٹھیک ورنہ شاید میں یہ سب چھوڑ کر کہیں اور چلی جاؤں۔

کبریٰ خان ڈرامہ سیریل ’الف، سنگ مرمر، شادی مبارک، الف اللّٰہ اور انسان، انداز ستم، مقابل، خدا اور محبت‘ اور دیگر میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھا چکی ہیں۔

اس کے علاوہ ان کی فلموں میں ’جوانی پھر نہیں آنی2، پرواز ہے جنون، ویلکم ٹو کراچی‘ وغیرہ شامل ہیں