ایک کروڑ نوکریاں دینے کا دعویٰ کرنے والوں کے دور حکومت میں لوگ بیروزگاری سے تنگ آکر خودکشیاں کررہے ہیں۔ جام اکرام اللہ دھاریجو۔

ایک کروڑ نوکریاں دینے کا دعویٰ کرنے والوں کے دور حکومت میں لوگ بیروزگاری سے تنگ آکر خودکشیاں کررہے ہیں۔ جام اکرام اللہ دھاریجو۔ کراچی 24 نومبر۔ صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھر دینے کا دعویٰ کرنے والوں کے دور حکومت میں لوگ بیروزگاری سے تنگ آکر خودکشیاں کررہے ہیں جو سلیکٹیڈ حکمرانوں کے لئے لمحہ فکریہ ہے۔ یہ بات آج انہوں نے
وفاقی مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان کے بیان پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ سلیکٹیڈ وزیراعظم کی کابینہ کے سلیکٹیڈ لوگ انجان بن کر کام کر رہے ہیں اور
مشیر اطلاعات کی یاداشت شاید چلی گئی ہے ۔کوئی انہیں یاد دلائے کہ فادر آف سی پیک آصف علی زرداری ہیں ۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے مزید کہا کہ اس وقت موجودہ مشیر اطلاعات بھی پیپلز پارٹی حکومت کا حصہ تھیں ۔سی پیک منصوبہ 2013 کے دورانیہ میں اس وقت کے صدر آصف علی زرداری کا کارنامہ تھا۔ صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور امداد باہمیجام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ مشیر اطلاعات یہ کیسے بھول گئیں کہ سی پیک منصوبے پر دستخط چینی صدر اور سابقہ صدر آصف علی زرداری نے کئیے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ سابق صدر نے چینی وزیراعظم کے ساتھ پاک چین اقتصادی راہداری کے منصوبہ پر مفاہمت کی یاداشت پر بھی دستخط کیے تھے اور
دونوں ملکوں کے درمیان سی پیک منصوبہ شروع کرنے کی تقریب 22 مئی 2013 کو اسلام آباد میں ہوئی تھی ۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے وفاقی حکومت پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ
نااہل سلیکٹیڈ حکمران 16 ماہ کے دورانیہ میں خود تو کچھ نہیں کر سکیں البتہ دیگر جماعتوں کے منصوبے اپنے اکاونٹ میں شامل کر رہے ہیں ۔ صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ
فادر آف سی پیک کو علاج کی سہولتیں مہیا نہیں کی جا رہی سندہ کی عوام احساس کمتری میں ہیں کہ کیا ہم واقعی سوتیلے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ
سگے کو علاج کی سھولتیں میسر ہیں سوتیلا علاج نہ ہونے کی وجہ سے زندگی موت کی جنگ لڑ رہا ہے۔ آصف علی زرداری کو کچھ ہوگیا تو زمے دار نااہل سلیکٹیڈ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ حب الوطنی کے نام پر پیپلز پارٹی کی قیادت سے اور کتنی قربانیاں اور امتحانات لئے جائیں گے۔ نوجوانوں کے نام پر سیاست کرنے والوں کو کوئی ذرا بتلائے کہ پاکستان کے 64 فیصد نوجوان بیروزگار ہیں اور اعلامیہ ایک کروڑ نوکریوں کے انتظار میں ہیں جبکہ مہنگائی کا بم چھوڑنے والے اب کرنٹ اکاونٹ کے خسارے ختم ہونے کی دعویٰ کر رہے ہیں ۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ
خوردونوش کی اشیا کی قیمتیں آسمان سے باتیں کر رہی ہیں عام آدمی مشکل سے دوچار ہے سلیکٹیڈ حکمران زرا دیکھ لیں ان کی 16 ماہ کی حکومت میں کتنے لوگوں نے بیروزگاری اور حالات سے تنگ ہوکرخودکشیاں کیں ہیں اور پاکستانی عوام موجودہ اسیمبلیاں تحلیل ہونے کی دعائیں مانگ رہے ہیں ۔