غیر قانونی طور پر ترکی جانے والے ہوشیار

ترکی میں غیر قانونی طور پر مقیم 42 پاکستانی ملک بدر کر دیے گئے ہیں، پاکستانیوں کو ترک ایئر لائن ٹی کے 710 سے اسلام آباد پہنچا دیا گیا ہے۔

ذرایع کا کہنا ہے کہ ملک بدر کیے جانے والے پاکستانی ملازمتوں کی تلاش میں غیر قانونی طور پر ترکی گئے تھے، پکڑ میں آنے کے بعد انھیں اسلام آباد پہنچا کر سیل منتقل کر دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ رواں برس فروری میں ترک حکومت نے پاکستان سے مطالبہ کیا تھا کہ ترکی میں غیر قانونی طور پر مقیم 50 ہزار پاکستانیوں کی واپسی کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں، اس سلسلے میں پاکستانی سیکریٹری خارجہ نے وزارت خارجہ کو خط بھی لکھا تھا۔گزشتہ چند برسوں سے پاکستان ترکی میں غیر قانونی تارکین کا سب سے بڑا مرکز بن چکا ہے، ترک اداروں کے مطابق ترکی میں پچاس ہزار سے زائد پاکستانی شہری غیر قانونی طور پر موجود ہیں۔

واضح رہے کہ رواں ماہ سعودی عرب میں غیر قانونی طور پر مقیم افراد کو ریلیف دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے، پاکستانی سفارت خانے نے بھی ہم وطنوں کو رابطہ کرنے کی ہدایت کی تھی تاکہ انھیں وطن واپس لایا جا سکے۔

ویلفئیر اتاشی محمود لطیف نے کہا تھا کہ اسکیم کے تحت وطن جانے والے افراد پھر سعودی عرب نہیں جا سکیں گے۔