یورپین یونین پاکستان کے چار رکنی وفد نے انجی بورز زورن کی قیادت میں صوبائی انسانی حقوق کی سیکریٹری لبنیٰ صلاح الدین سے ملاقات

کرا چی ۔ یورپین یونین پاکستان کے چار رکنی وفد جس کی قیادت انجی بورز زورن کررہی تھی نے صوبائی انسانی حقوق کی سیکریٹری لبنیٰ صلاح الدین سے ان کے دفتر میں ملاقات کی۔وفد کچھ دیر ان کے ہمراہ رہا اور باہمی امور کے معاملات انسانی حقوق کے قوانین کی صوبہ سندھ میں عملدرآمد اور پاکستان میں جینیوا کنونشن کے 27 میں سے 10 قراردادوں پر عمل درآمد کے نتیجے میں ٹریڈر ایمپلی منٹیشن سیل (ٹی آئی سی) پر پیشرفت،صوبائی محکموں کے درمیان بلاواسطہ رابطوں اور کارکردگی کے مختلف امور پر تفصیلی بات چیت کی اور تمام معاملات کا جائزہ لیا۔صوبائی سیکریٹری لبنیٰ صلاح الدین نے بتایا کہ محکمہ انسانی حقوق سندھ ترجیحی بنیاد پر کنوینشن ٹریٹی سیل کے حوالے سے ایک ٹیمپلیٹ ترتیب دیا ہے جس پر کارگردگی و رابطوں کے ذریعے مزید کام کرنے کی ضرورت ہے اور وفاقی حکومت یورپی یونین کے معاہدوں کی روشنی میں حکومت سندھ نے اجلاس منعقد کرنے کی تیاری مکمل کر لی ہے آئندہ ہفتے چیف سیکریٹری و اٹارنی جنرل آف پاکستان کی اجلاس میں تمام تر پیشرفت پر کام کیا جا رہا ہے۔سندھ میں انسانی حقوق کی آگاہی کے لئے محکمہ نے پلان ترتیب دیا ہے محکمہ اور معاون خصوصی وزیر اعلی سندھ اس سلسلے میں ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہے ہیں تا کہ یورپین یونین اور پاکستان کے معاہدوں کے درمیان عملدرآمد کو یقینی بنایا جا سکے۔فرسٹ سیکریٹری نے نے صوبائی محکمہ کی کاوشوں اور ترجیحات کو سراہتے ہوئے پاکستان اور سندھ میں بالخصوص انسانی حقوق کے حوالے سے تمام تر تعاون اور مدد کا یقین دلاتے ہوئے امید ظاہر کی کہ محکمہ سندھ میں فعال کردار ادا کرکے مطلوبہ نتائج حاصل کرنے میں کامیاب ہو گا اور محکمہ کی ترقیاتی سرگرمیوں کو وقت پر مکمل ہونے کا اظہار کیا تاکہ سندھ کے عوام کو بھرپور انسانی حقوق کے حوالے سے ریلیف مل سکے۔اجلاس میں پاکستان میں انسانی حقوق کے فروغ کے لیے کام کرنے والی ٹیم لیڈر پال ڈالٹن، جویریا رضوی کابانی کونسلر،پولیٹیکل ٹریڈ و کمیونیکیشن ،علی دایان حسن سینئر کی ایکسپرٹ فروغ انسانی حقوق پاکستان کے علاوہ ڈائریکٹر انسانی حقوق انیس قادر منگی و دیگر بھی موجود تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں