سابق آئی جی غلام حیدر جمالی کے وکیل فاروق ایچ نائیک کی عدم حاضری

کراچی /سندھ ہائیکورٹ  سندھ پولیس میں بڑے پیمانے پر کرپشن کا معاملہ سابق آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی، اے آئی جی تنویر طاہر  اور دیگر ملزموں کی درخواست ضمانت کی سماعت 
سابق آئی جی غلام حیدر جمالی کے وکیل فاروق ایچ نائیک کی عدم حاضری پر چیف جسٹس  ملزم اور وکلا جان پر بوجھ کر تاخیری حربے استعمال کررہے ہیں، چیف جسٹس  تھوڑا سا معاملات کو ہم بھی سمجھتے ہیں، دو چار کو جیل بھیج دیں گے تو سب ٹھیک ہوجائے گا، چیف جسٹس  عدالت کا ملزمان کے وکلا کو ایک ہفتے میں پیش ہونے کا حکم اگر وکلا پیش نہ ہوئے تو عبوری ضمانت خارج کردیں گے، چیف جسٹس  ملزموں پر 15 کروڑ روپے سے زائد  سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے کا الزام ہے ملزموں میں سابق اے آئی جی تنویر احمد طاہر ، فدا حسین شاہ، کامران راشد شامل سابق اے آئی جی فیصل بشیر میمن، سرمد مدحت حسین،اور علی اصغر اور دیگر شامل  ریفرنس کنٹرولر جنرل اکاؤنٹس کی شکایت پر بنایا گیا، نیب ملزموں پر پولیس فیڈنگ فنڈ کی مد میں کرپشن کا الزام ہے ، نیب پولیس فیڈنگ فنڈ میں اہلکاروں کی تنخواہوں سے کٹوتی کی گئی ، نیب  ملزموں نے پولیس گاڑیوں کی مینٹینس کے نام پر سرکاری خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچایا ، نیب ملزموں نے ٹینڈرز کے بغیر من پسند افراد کو ٹھیکے دیئے گئے، نیب

اپنا تبصرہ بھیجیں