ضلع کونسل کراچی میں ٹیکس وصولی کی مد میں اربوں روپے کرپشن کامعاملہ..

ضلع کونسل کراچی میں ٹیکس وصولی کی مد میں اربوں روپے کرپشن کامعاملہ..   چئیرمین ضلع کونسل کراچی سلمان عبداللہ مراد کو 3 دسمبر تک کی عبوری ضمانت مل گئی.  سلمان عبداللہ مراد کو ایک لاکھ روپے مچلکے جمع کرانے کا حکم. مقدمے کا حتمی چالان انٹی کرپشن کورٹ میں ہیش کردیا گیا.   دودھ دینے والے جانوروں کے سالانہ ٹیکس وصولی والے ٹھیکے  کی آڑ میں غیر قانونی ٹیکس وصول کیا جارہا ہے. استغاثہ
مذکورہ ٹیکس وصولی کا ٹھیکہ ہی غیر قانونی طور پر آکشن کیا گیا تھا. چالان ملی بھگت سے ٹینڈر آکشن کیا جعلی کارروائی دکھا کر گھر بیٹھے ٹھیکہ جاری چالان ہر سال ٹیکس شیڈول تو بڑھایا گیا مگر اس حساب سے بڈ پرائیس نہیں بڑھائی گئی۔ چالان ملی بھگت کرکے یہ ٹھیکہ ایک ہی ٹھیکیدار حاکم جسکانی کو مختلف ناموں سے جاری کیا جاتا رہا۔ چالان مالی سال  2012-13 میں یہ ٹھیکہ اس وقت کی سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کراچی کی جانب سے گیارہ کروڑ روپے میں جاری کیا گیا۔چالان سال 2013 میں ضلع کونسل کی بحالی کے بعد مذکورہ ٹیکس وصولی  کے ٹھیکے پر ضلع کونسل کراچی غیر قانونی طور قابض ہوگئی۔ چالان مالی سال 2013-14 میں وہی ٹھیکہ ضلع کونسل کراچی نے صرف سوا تین کروڑ روپے میں جاری کیا چالان یہ ٹیکس صرف ضلع کونسل کراچی کی حدود میں قائم باڑوں میں موجود دودھ دینے والے جانوروں کا وصول کیا جانا تھا۔ چالان  ضلع کونسل کراچی کے چیرمین اور افسران نے ملی بھگت کرکے ٹھیکیدار کو شہر کے داخلی راستوں پر چنگیاں قائم کروادیں چالان   ٹھیکیدار شہر میں داخل ہونے تمام جانوروں کا ٹیکس وصول کرتا رہا۔  چالان مالی سال 2019-20 کا ٹھیکہ صرف آٹھ کروڑ پچھتر لاکھ روپے کا جاری گیا چالان   ٹیکس وصولی سوا ارب روپے!! کے قریب ہے۔ چالان ٹیکس وصولی کے طریقہ کار میں بھی بڑے پیمانے بے قائدگیاں  کی جا رہی ہیں۔چالان قوانین کے مطابق یہ ٹیکس وصولی صرف کونسل کے ملازمین وصول کرسکتے ہیں چالان   طریقہ کار کے مطابق وہ ٹھیکیدار کے مینیجر کو رجسٹر میں اندراج کے بعد وصول کرواتے ۔ چالان جانوروں کی ہیلتھ کلیئرنس فیس تو وصول کی جا رہی ہے مگر ویٹنری ڈاکٹر موجود ہی نہیں ہوتے۔ چالان  دو ویٹنری ڈاکٹر بھی جعلی نکلے اور اپنی ڈگریاں بھی پیش نہ کرسکے۔ چالان
 کراچی کے ٹھیکے کو اسی طرح جاری رکھا جاتا تو یہی ٹھیکہ ایک ارب روپے میں آکشن کیا جاسکتا تھا۔چالان
مذکورہ چیک پوسٹ سے پولیس کی جعلی موبائیل،  چار جعلی پولیس اہلکاروں سمیت کئی افراد کو گرفتار کیا تھا اور مقدمہ درج کیا گیا تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں