پاکستان بیرون ملک سرمایہ کاروں کے لئے پرکشش مقام بن چکا ہے: صدرمملکت

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے بلوچستان میں لائیو اسٹاک ایکسپو سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس شعبہ کی ترقی سے برآمدات میں اضافے، غربت کے خاتمے اور ملکی معاشی استحکام میں مدد ملے گی۔ ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ ماہی گیری کے فروغ کے لئے جدید مشینری اور جدید ٹیکنالوجی بروئے کار لانے کی ضرورت ہے، بلوچستان میں ماہی گیری سمیت لائیو اسٹاک کے دیگر شعبوں سے مستفید ہونے کے وسیع مواقع موجود ہیں ،آئندہ پانچ سال میں ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی۔ صدر مملکت نے کہا کہ دنیا میں جتنے بھی انبیاءآئے انہوں نے بکریاں چرانے کا پیشہ اختیار کیا، یہ پیشہ انبیاءکی سنت ہے، لائیو اسٹاک کا انسانوں کی زندگی سے گہرا تعلق ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں خوراک کی بے انتہاءکمی ہے، بچے غذائی کمی کا شکار ہیں۔ لائیو اسٹاک اہم شعبہ ہے جس سے دودھ اور گوشت ملتا ہے۔ انسانی زندگی سے لائیو اسٹاک کا گہرا تعلق ہے،اس شعبہ پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔

صدرمملکت نے کہا کہ پاکستانی ڈاکٹر بیرون ملک خدمات سرانجام دے رہے ہیں، ڈاکٹرز، انجینئرز، انفارمیشن ٹیکنالوجی اور مصنوعی ذہانت کے ماہرین کو بیرون ملک جانا چاہئے۔ صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان کی معیشت بہتر ہو رہی ہے، ملک میں لائیو اسٹاک کے شعبہ کے لئے بڑے وسیع مواقع ہیں،غربت میں کمی آئے گی، خوراک میں بہتری آئے گی، برآمدات بڑھنے سے معیشت مستحکم ہوگی۔ اس شعبہ کی ترقی سے خاندان اور دیہی علاقوں کے لوگوں کے معیار زندگی میں بہتری آئے گی۔لائیو اسٹاک کے حوالے سے آرگینک گروتھ اور بائیورسٹی اہمیت کی حامل ہے۔انہوں نے کہا کہ غیر ذمہ داری کے باعث 70 فیصد مچھلیوں کے اسٹاک کو ختم کیا،ہمیں ایکوا فشنگ پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ بلوچستان نے بہترین لائیو اسٹاک پالیسی بنائی ہے، مسئلہ کی نشاندہی کر کے اس حوالے سے منصوبہ بندی کر کے بہتر نتائج حاصل کئے جا سکتے ہیں، اپنے اور دنیا کے تجربات کے مشترکہ استفادہ سے عمل درآمد میں آسانی رہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دورہ جاپان اور چین کے دوران کئی سرمایہ کاروں اور اداروں کے سربراہان سے ملاقات ہوئی اور انہوں نے پاکستان میں سرمایہ کاری میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا۔