: پختون آباد نیو میاں والی کالونی میں واقع تبسم میڈیکل سینٹر میں ذچہ کی ہلاکت

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پختون آباد کے رہائشی کی جانب سے نیومیانوالی کالونی میں قائم تبسم کیئرمیڈیکل سینٹر کے ڈاکٹروں کی لاپرواہی کے سبب بیٹی کی ہلاکت کے خلاف محکمہ صحت اورپولیس کے اعلی افسران سے اسپتال اتنظامیہ کے خلاف کاروائی کی درخواست دائرکی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق پختون آباد کے رہائشی اخوندازہ نے محکمہ صحت اورہیلتھ کئیرکمیشن کے اعلیٰ حکام، ڈی ایچ او ضلع ویسٹ، آئی جی پولیس، ڈی آئی جی ویسٹ، ایس ایس پی ویسٹ اورایس ایچ او پیرآباد کے نام جمع کرائی گئی درخواست میں الزام عائد کیاہے کہ نیومیانوالی کالونی میں قائم تبسم کیئرمیڈیکل سینٹر میں زیرعلاج اس کی بیٹی کی ڈیلیوری کے دوران ڈاکٹروں کی لاپرواہی سے اس کی جان چلی گئی۔ واقعے کی تفصیلات بتاتے ہوئے اخوندزادہ نے بتایاکہ ان کی اوران کے داماد کی مرضی اوراجازت کے بغیر ان کی بیٹی کا وقت سے پہلے زبردستی آپریشن کیاگیا جبکہ ان کے داماد سے نارمل ڈیلیوری کاکہہ کردستخط لئے گئے۔انہوں نے الزام عائدکیاہے کہ ڈیلیوری سے قبل ذچہ کے ضروری ٹیسٹ اورالٹراساو ¿نڈبھی نہیں کرائے گئے جبکہ آپریشن کے دوران استعمال کئے گئے غیرمعیاری اوراسٹرلیازیڈ نہیں تھے۔ انہوں نے کہا کہ خون ضائع کئے جانے کی وجہ سے مریضہ کی طبعیت مزید خراب ہوگئی جس کے بعد مریضہ کو ایکسپائر خون چڑھایا گیا جس کے بعد ذچہ کے گردوں اورجگرنے کام کرنا چھوڑ دیاجس کی وجہ سے جلدی ایس آئی یو ٹی منتقل کرناپڑا جہاں وہ 7 نومبرکوانتقال کرگئی۔شہری اخوندزاہ نے صحت اورپولیس کے حکام سے درخواست کی ہے کہ انہیں انصاف دیالا جائے او شہریوں کے قیمتی جانوں سے کھیلنے والے مذکورہ اسپتال کے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں