جان کی حفاظت کے لئے نوازشریف کو باہر جانا چاہیئے

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے نوازشریف کو پاکستان میں تمام سہولیات فراہم کیں، ہماری دعا ہے کہ اللہ انہیں صحت دے اور وہ واپس آ کر اپنی سیاست کریں۔

بابری مسجد کے فیصلے پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہندؤستان نے پاکستان پر سے توجہ ہٹانے کے لیے یہ فیصلہ سنایا ہے۔ ٹکٹ کی تفصیلات کے مطابق نوازشریف قطر ایئرویئر کی پرواز کیوآر 629 سے لندن کے لیے روانہ ہوں گے۔ شہباز شریف اور ڈاکٹر عدنان بھی نواز شریف کے ساتھ ہوں گے۔

اس ضمن میں ذرائع سے حاصل ہونے والی ٹکٹ پر نوازشریف کی واپس پاکستان کے لیے سفر کی تاریخ 27 نومبر درج ہے۔

اس سے قبل خبر آئی تھی کہ نواز شریف اتوار کو علاج کے لئے لندن روانہ ہونگے