طیب اردوان بھی علامہ اقبال کے مداح نکلے

 ترک صدر طیب اردوان نے گزشتہ سال ناکام فوجی بغاوت کے دو سال مکمل ہونے پر لاکھوں کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے علامہ اقبال کا شہر پڑھا تھا۔ طیب اردوان نے کہا تھا کہ ’پاکستان کے قومی شاعر علامہ اقبال نے اس موقع کو اس طرح بیان کیا ہے۔‘ اگر عثمانیوں پر کوہ غم ٹوٹا تو کیا غم ہے کہ خون صد ہزار انجم سے ہوتی ہے سحر پیدا اردوان کے اس شعر کے بعد وہاں موجود تمام حاضرین نے تالیاں بجا کرعلامہ اقبال کو داد دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں