بیٹو ہاﺅس میں لوگوں سے ملاقات اور ان سے شکایتیں سنی ، مسائل سے وزیر اعظم کو آگاہ کروں گا ۔ گورنرسندھ  

 گورنر سندھ عمران اسماعیل پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما لیاقت علی جتوئی کے ظہرانہ کی دعوت پر بیٹو جتوئی پہنچے۔اس موقع پرپی ٹی آئی کے پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ، رکن سندھ اسمبلی جمال صدیقی اور دیگر رہنماءبھی ان کے ہمراہ موجودتھے۔لیاقت علی جتوئی، صداقت علی جتوئی اور دیگر نے گورنر سندھ اور رہنماوں کا استقبال کیا۔گورنر سندھ نے بیٹو ہاوس پر وکلاء، عمائدین اور عام عوام سے ملاقات کی اور ان کی شکایتیں سنی۔ بعد ازاں گورنر سندھ عمران اسماعیل نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آپ کے مسائل وزیراعظم کے سامنے پیش کروں گا اور مسائل کو حل کرانے کی ہر ممکن کوشش بھی کروں گا۔ میڈیا کے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت دھرنے کو سنجیدگی سے دیکھ رہی ہے کوشش کی ہے کہ دھرنے میں جانی یا مالی نقصان نہ ہو تمام تر کریڈٹ وفاقی حکومت کو جاتا ہے، حکومت دھرنا قائدین کے ساتھ مذاکرات کررہی ہے، دھرنا اپنے منطقی انجام تک پہنچنے والا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر کوئی حلقہ کھلوانا ہے یا عوامی مسئلہ ہے تو حل کرنے کے لئے تیار ہیں، قانونی مطالبات پر بات چیت کے لئے تیار ہیں غیر قانونی مطالبات پر کوئی بات نہیں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت کوئی 400 ادارے بند نہیں کررہی لوگ افواہوں پر توجہ نہ دیں۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ وفاق حکومت نے پی آئی اے کو بہتر بنا یااس سال پی آئی اے میں کوئی نقصان نہیں ہوا، اسٹیل مل کو بھی چلائیں گے، جو ادارے چلنے کے قابل نہیں ہیں وہ بہت کم ہیں عوام تسلی رکھیں حکومت عوام کو نوکریاں دینے کے مواقع ڈھونڈ رہی ہے، عوامی شکایات کے بارے میں کئے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ گذشتہ حکومت سے حساب لیا جائے کہ انہوں نے عوام کو سہولت کیوں نہیں دی۔ وفاق کے جانب سے صوبائی حکومت کی مدد کے بارے میں کئے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت صوبائی حکومت کی ہر قسم کی مدد کے لئے تیار ہے، عمران خان پورے پاکستان کے وزیراعظم ہیں، وفاق حکومت دکھ اور تکلیف میں عوام کے ساتھ کھڑا ہوگا۔ لنگر خانے کے بارے میں کئے گئے سوال پر گورنر سندھ نے کہا کہ لنگر خانے کے زریعے حکومت ان لوگوں کو کھانا دے رہی ہے جو لوگ بھوک اور افلاس میں زندگی گزار رہے ہیں۔  پہلی مرتبہ ھیلتھ کارڈ کا اجراءکیا گیا ہے جس کے تحت ساڑھے سات لاکھ روپے کا علاج کرایا جاسکتا ہے۔ گورنر سندھ نے کہا کہ وزیر اعظم کا وژن ہے  پاکستان کو فلاحی ریاست بنا جس میں سب کو ایک جیسا نظام ملے۔ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لٹیرے تو پکڑے جارہے ہیں سارا فساد ہی یہ ہے کہ لٹیروں کو نہ پکڑا جائے۔ گورنر سندھ نے کہا کہ  جتوئی صاحب عوامی مسائل سے وزیراعظم کو آگاہ کریں گے  جو مسائل وہ وزیراعظم کو بتائیں گے انہیں حل کیا جائے گا،وزیر اعظم عمران خان نے اس علاقے کی ترقی کے لیے لیاقت جتوئی کو ٹاسک دیا ہے علاقے کے مسائل پر وزیر اعظم خصوصی فنڈ بھی مہیا کریں گے۔گورنرسندھ نے کہا کہ وزیر اعظم اس ملک کو مدینہ کی ریاست بنانے جارہے ہیں۔ 

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کو کسی بھی شعبے میں وفاق کی مدد چاہیے ہوگی وہ ہم کریںگے۔ پانی کی چوری سے متعلق کئے گئے سوال پر گورنر سندھ نے کہا کہ وفاق سندھ رینجرز کی مدد سے پانی کی چوری رکوانے میں کردار ادا کرئے گی۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ جتوئی صاحب کو کہا ہے وہ آپ کے لیے مزید پانی کی اسکیمیں دیں ۔ اس موقع پر موجود یاقت علی جتوئی نے کہا کہ گورنر سندھ کے شکر گذار ہیں وہ تشریف لائے، عوام کے مسائل پر وزیراعظم کو آگاہ کرچکے ہیں آپ کے مسائل کے حل کے لیے گورنر صاحب پل کا کردار ادا کریں گے