کشمیر ی جن حالات میں رہ رہے وہ ناقابل برداشت،بہتری لائی جائے: جرمن چانسلر

جرمن چانسلر انجیلا مرکل بھی مظلوم کشمیریوں کی آواز بن گئیں،انہوں نے نئی دہلی میں کھڑے ہو کر مودی سرکار کو آئینہ دکھایا،انجیلا مرکل نے کہا کہ جن حالات میں مقبوضہ کشمیر کے لوگ رہ رہے ہیں وہ ناقابل برداشت ہیں،مقبوضہ کشمیر کے حالات میں بہتری بہت ضروری ہے ۔ اپنے ساتھ آئے صحافیوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ بھارتی وزیراعظم مودی سے ملاقات میں ضرور اٹھاؤں گی، کشمیر میں حالات نارمل کرنے کے لئے مودی کا منصوبہ جاننا چاہتی ہوں جبکہ بھارت نے جرمنی کے ساتھ اپنی سٹریٹجک شراکت داری کو مزید مضبوط کرتے ہوئے باہمی تعاون کے 17 معاہدوں اور پانچ مشترکہ مفاہمتی یاداشتوں پر دستخط کئے ہیں۔بھارت نے دفاعی صنعتوں میں سرمایہ کاری کے لئے بھی دعوت دی ، معاہدے دہلی میں واقع حیدرآباد ہاؤس میں بین الحکومتی مشاورت (آئی سی جی) کے وفود کی سطح پر بات چیت میں کئے گئے ۔اس موقع پر وزیراعظم مودی نے مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا ہے کہ مجھے بہت خوشی ہے کہ بھارت اور جرمنی کے درمیان ہر شعبہ میں ، خاص طور سے جدید ٹیکنالوجی میں دور رس اور سٹریٹیجک تعاون میں اضافہ ہورہا ہے ،۔جرمنی سے تما م شعبوں میں تعلقات کو فروغ دینگے