رابی پیرزادہ کا نازیبا ویڈیوز لیک ہونے پر ایف آئی اے سے رجوع

پاکستان کی پاپ گلوکارہ، ماڈل و اداکارہ رابی پیرزادہ سوشل میڈیا پر اکثر و بیشتر ایسی تصاویر اور ویڈیوز شیئر کرتی ہیں جن کے باعث انہیں تنازعات کا سامنا کرنا پڑا۔
ایک مرتبہ پھر اداکارہ کو تنازع کا سامنا اس وقت ہوا جب سوشل میڈیا پر ان کی نہایت نازیبا ویڈیوز اور تصاویر لیک کر دی گئیں۔
برہنہ ویڈیوز لیک ہونے کے بعد رابی پیرزادہ کا نام گزشتہ روز پاکستانی ٹوئٹر ٹرینڈز میں نمبر ون پر رہا۔

ان ویڈیوز کے حوالے سے گلوکارہ نے عربی خبر رساں ادارے کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے اعلان کیا کہ انہوں نے ویڈیوز اور تصاویر کے حوالے سے سائبر کرائم ایکٹ کے تحت کارروائی کی درخواست دے دی ہے۔
گزشتہ روز ایسی ٹوئٹس بھی سامنے آئیں تھی کہ یہ برہنہ ویڈیوز جعلی ہیں جبکہ اس میں موجود خاتون رابی پیرزادہ نہیں۔

جبکہ ایسی قیاس آرائیاں بھی سامنے آئیں کہ گلوکارہ کے سابق بوائے فرینڈ نے ان سے بدلہ لینے کے لیے یہ ویڈیوز اور تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل کی۔

البتہ رابی پیرزادہ نے اپنے انٹرویو میں بتایا کہ ‘یہ ذاتی ویڈیوز اور تصاویر میرے فون میں موجود تھی لیکن میں نے کچھ عرصہ قبل ہی اپنا فون فروخت کیا تھا’۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ جہاں انہوں نے اپنا اسمارٹ فون فروخت کیا ہے ان کے خلاف کارروائی کی درخواست دے دی ہے۔
یہ بھی پڑھیں: سانپ رکھنے کا کیس: رابی پیرزادہ کے وارنٹ گرفتاری جاری
یاد رہے کہ گزشتہ ماہ گلوکارہ کی ’سانپ اور اژدھوں‘ کے ساتھ بنائی گئی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہوئی تھی۔
ویڈیو میں رابی پیرزادہ کو بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں ڈھائے گئے مظالم پر انہیں دھمکی دیتے ہوئے دیکھا گیا تھا۔ جس کے بعد پنجاب کے محکمہ وائلڈ لائف نے ان کے خلاف ایکشن لیتے ہوئے عدالت جانے کا فیصلہ کیا تھا-dawn-news-report


اپنا تبصرہ بھیجیں