آصف زرداری کے ہاتھوں میں کپکپاہٹ مزید بڑھ گئی

تفصیلات کے مطابق ذرایع نے کہا ہے کہ میڈیکل بورڈ نے آصف زرداری کا طبی معائنہ کرنے کے بعد تشخیصی رپورٹ وزارتِ قومی صحت کو ارسال کر دی ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ سابق صدر کے پلیٹ لیٹس کی تعداد میں بتدریج بہتری آ رہی ہے۔

اسپتال ذرایع کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کے پلیٹ لیٹس کی تعداد ایک لاکھ 35 ہزار ہو گئی ہے، لیکن ہاتھ اور پیر سن ہونے کی شکایت برقرار ہے، ہاتھوں میں رعشے کے باعث کپکپاہٹ میں بھی نمایاں اضافہ ہواذرایع کا یہ بھی کہنا ہے کہ آصف زرداری کے دل کے بائیں حصے میں کلاٹ بدستور موجود ہے، میڈیکل بورڈ نے تھیلیم اسکین کرنے پر غور کیا ہے، تھیلیم اسکین کے ذریعے کلاٹ کے مقام اور موجودہ حجم چیک کیا جائے گا۔

علاوہ ازیں، آصف زرداری کا شوگر اور بلڈ پریشر لیول معمول کے مطابق ہے، شوگر لیول نارمل رکھنے کے لیے انسولین دی جا رہی ہے، تمام ٹیسٹ کلیئر ہونے تک آصف زرداری کو اسپتال ہی میں رکھے جانے کا امکان ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز کی طبی رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ سابق صدر کے الٹراساؤنڈ میں یورینری ٹریکٹ انفیکشن کی تشخیص ہوئی ہے، جس پر انھیں اینٹی بائیوٹک ادویات شروع کرا دی گئی ہیں