مظاہرین پر فائرنگ، 18 ہلاک

کربلا میں مظاہرین پر فائرنگ کے نتیجے میں 18 افراد ہلاک اور سیکڑوں زخمی ہوگئ

غیرملکی میڈیا ’’دی گارجین‘‘ کے مطابق عراقی شہر کربلا میں حکومت مخالف مظاہرین پر نقاب پوش حملہ آوروں نے فائرنگ کردی، واقعے میں 18 افراد ہلاک اور کئی سو زخمی ہوگئے۔

گورنر کربلا نفیس الخطابی نے فائرنگ کے واقعے میں مظاہرین کی ہلاکتوں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ کچھ سیکیورٹی اہلکار زخمی ہوگئے۔

میڈیا کے مطابق حملہ عراقی شہریوں کے حکومت مخالف مظاہروں کے مسلسل پانچویں دن کیا گیا، عراقی عوام کرپشن، سہولیات کی عدم فراہمی اور دیگر شکایات پر احتجاج کررہے ہیں۔

عراق کے مختلف شہروں میں جاری حالیہ مظاہروں کے دوران ہلاک افراد کی تعداد 240 تک پہنچ گئی ہے۔

کربلا میں فائرنگ کے واقعے میں کون ملوث ہے، تاحال اس حوالے سے کچھ سامنے نہیں آسکا، مظاہرین کا کہنا ہے کہ ماسک پہنے حملہ آور کون تھے معلوم نہیں، عراقی سپاہی مظاہرین کے چاروں طرف تھے تاہم جب حملہ آوروں نے فائرنگ شروع کی تو وہ واپس جاچکے تھے