وفاقی اردو یونیورسٹی کا کے 73 سالہ وائس چانسلر کو اسلام آباد ہائیکورٹ تعیناتی کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئےفوری طور ہٹانے کا حکم دیدیا

کراچی ( ابو مناص میاں )وفاقی اردو یونیورسٹی کا کے 73 سالہ وائس چانسلر کو اسلام آباد  ہائیکورٹ نےغیر قانونی تعیناتی پر عہدہ سے ہٹانے  کا حکم  دے دیا تفصیلات کے مطابق  مطابق وفاقی اردو یونیورسٹی 2017 میں یونیورسٹی سینٹ  کی منظوری کے بعدتعینات ہونے والے  پروفیسر ڈاکٹر  الطاف حسین کے خلاف دائرایک درخواست پر پر فیصلہ دیتے ہوئے انکی تعیناتی کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئےفوری طور ہٹانے کا حکم دیدیا واضح رہے کہ ڈاکٹر الطاف حسین کے خلاف سابق وائس چانسلر اقبال ڈی محمد کی جانب سے یونیورسٹی میں  غیر قانونی   تقرریوں اور تعیناتیوں کوقانونی قرار دینے کے الزامات ہیں  جبکہ یونیورسٹی پر قابض 13 رکنی مافیا نے لوٹ مار کا بازار گرم کر رکھا جو کہ  وائس چانسلر کے  پی اے شرجیل نوید کی قیادت میں  سرگرم ہے ذرائع کے مطابق شرجیل نوید نے یونیورسٹی میں تمام کینٹین پر قبضہ کر کے لوٹ  کے تمام ریکارڈز توڑ دیئے ہیں جبکہ وائس چانسلر کے سب اہم رتنوں نے اپنی کرپشن چھپانے اوربچاو کے لئے ہاتھ پاوں مارنے شروع کر دئیے ہیں ذرائع کے مطابق یونیورسٹی میں ڈائریکٹر فنائس۔ رجسٹرار اور مختلف شعبوں کے سربراہوں کی غیر قانونی  تقرریوں کیخلاف تحقیقات کا بھی آغاز کر دیا گیا ہے ذرائع کے مطابق چانسلر یونیورسٹی و صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی جانب سے یونیورسٹی کے معاملات کو ٹھیک کرنے کیلئے یونیورسٹی کے اچھی شہرت کے حامل سابق  افسران کو ذمہ داریاں دینے کا عندیہ دیا ہے





اپنا تبصرہ بھیجیں