سماجی کارکن پروین رحمان کے قتل کیس میں پراپرٹی ٹائیکون ملک ریاض سے تفتیش کرنے کا فیصلہ

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں کچی آبادیوں اور دیہات کے رہائشیوں کو زندگی کی بہتر سہولیات کی فراہمی کے لیے کوشاں سماجی کارکن پروین رحمان کے قتل کیس میں پراپرٹی ٹائیکون ملک ریاض سے تفتیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے کے انسداد دہشت گردی ونگ کی جانب سے ایک نوٹس کے ذریعے ملک ریاض کو طلب کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ وہ کراچی بحریہ ٹاؤن کی زمین حاصل کیے جانے کے وقت مارچ سنہ 2013 میں مقامی دیہاتیوں کے تحفظ کے لیے کام کرنے والی پروین رحمان کے قتل میں اپنی پوزیشن واضح کریں۔
ملک ریاض کو 28 اکتوبر کو دن تین بجے اسلام آباد میں ایف آئی اے کے مرکزی دفتر میں طلب کیا گیا ہے۔ اورنگی پائلٹ پراجیکٹ کی ڈائریکٹر پروین رحمان کے سنہ 2013 میں کراچی میں قتل پر اس وقت کے چیف جسٹس نے ازخود نوٹس لیا تھا تاہم تاحال سندھ پولیس قتل کے اصل ملزمان تک نہیں پہنچ سکی۔report -by-Pakistan24.tv



اپنا تبصرہ بھیجیں