14 ویں کنزیومر چوائس ایوارڈ تقریب میں ایوارڈ تقسیم

 صارفین کو ان کے حقوق کے تحفظ کے لئے آگاہی ضروری ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو۔  کراچی 26 اکتوبر: سندھ کے وزیر صنعت و تجارت اور محکمہ امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ اگرچہ حکومت سندھ نے صوبہ بھر میں تقریبا تمام اضلاع میں کنزیومر کورٹس قائم کیں ، لیکن اس مسئلے پر آگاہی نہ ہونے کی وجہ سے صارفین اپنے حقوق کے تحفظ میں مکمل طور پر کامیاب نہیں ہورہے ہیں۔۔ یہ بات بطور مہمان خصوصی ہفتہ کے روز ایک مقامی ہوٹل میں منعقدہ 14 ویں کنزیومر چوائس ایوارڈ تقریب میں ایوارڈ تقسیم کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر وفاقی وزیر خالد مقبول صدیقی ، سی ای او کنزیومر چوائس کوکب خواجہ ، جاپان ، تھائی لینڈ کے قونصلیٹ جنرلز، معروف صنعتکار اور شہر کی قابل ذکر شخصیات بھی موجود تھیں۔ انہوں نے کہا کہ وقت کی ضرورت تھی کہ صارفین عدالتیں قائم کی جائیں۔ حکومت سندھ نے یہ عدالتیں قائم کیں لیکن صارفین میں اپنے حقوق سے متعلق آگاہی نہ ہونے کی وجہ سے یہ عدالتیں مکمل طور پر فعال نہیں ہیں۔ صوبائی وزیر صنعت و تجارت اور محکمہ امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے مزید کہا ، ‘اب وقت آگیا ہے کہ تمام اسٹیک ہولڈرز ، اپنے حقوق کے بارے میں صارفین میں آگاہی پیدا کرنے کے لئے مل کر کام کریں ، خاص کر میڈیا کو اس سلسلے میں اپنا مثبت کردار ادا کرنا چاہئے۔’. ان کی رائے تھی کہ تمام جدید اور مہذب معاشروں میں صارفین کے حقوق حاصل کرنے میں صارف عدالتوں کلیدی کردار ادا کرتی ہیں۔ حکومت سندھ صارفین کے حقوق کے تحفظ کے لئے پوری طرح پرعزم ہے اور صارفین کے حقوق کے حصول کے لئے کام کرنے والے تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ تعاون کرنے کے لئے تیار ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ ہمیں ایک ایسے معاشرے کے لئے قیام کے لیے کام کرنے کی ضرورت ہے جہاں کوئی کسی کی حق تلفی نہ کرسکے۔ ہینڈآوٹ نمبر ۔۔۔ 982 ایم یو
| | Virus-free. www.avast.com |

اپنا تبصرہ بھیجیں