ڈونلڈ ٹرمپ کا ترک صدر کو دھمکیوں کے بعد بات چیت کا مشورہ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک اور یوٹرن لیتے ہوئے ترک صدر کو دھمکیوں کے بعد بات چیت کا مشورہ دے دیا۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ترک ہم منصب رجب طیب اردوان کو خط لکھ کر شام کے مسئلے پر بات چیت کا مشورہ دیا۔ امریکی صدر نے ترک ہم منصب کو خط میں کہا کہ آئیں مل کر اچھی ڈیل پر کام کریں،آپ ہزاروں لوگوں کی جان نہیں لینا چاہتے اور میں آپ کی معیشت تباہ نہیں کرنا چاہتا،اکھڑ اور بیوقوف نہ بنیں، جلد آپ سے رابطہ کروں گا۔دنیا کو مایوس نہ کریں، آپ اچھا کام کرسکتے ہیں، آئیں شام کے مسئلے پر سمجھوتہ کرلیں، شام میں اچھا نہ ہوا تو تاریخ اسے شیطان کی طرح دیکھے گی۔ امریکی صدرٹرمپ کے خط پرامریکی میڈیا نے بھی حیرت کا اظہار کیا۔ امریکی صحافی جیک ٹیپرنے کہا کہ مجھے لگا ٹرمپ کا خط ایک مذاق ہے لیکن یہ حقیقت نکلا،ترک صدر کو بھیجا جانیوالا خط اتنا عجیب تھا کہ وائٹ ہاؤس سے تصدیق کرنا پڑی۔ واضح رہے کہ ترک صدرنے غیر ملکی ٹی وی کو دئیے گئے انٹرویو میں امریکی نائب صدر اور وزیر خارجہ کے ساتھ ملاقات سے انکار کرتے ہوئے کہا تھا کہ شام کے مسئلے پر مائیک پینس اورمائیک پومپیو سے نہیں ملوں گا ،شام کے مسئلے پر صرف صدر ٹرمپ سے براہ راست ڈیل کریں 

اپنا تبصرہ بھیجیں