کشمیر کی صورتحال مزید خطرناک ہو گئی :ملیحہ لودھی

کشمیر کی صورتحال مزید خطرناک ہو گئی :ملیحہ لودھی

پاکستان نے مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی تحقیقات کی حمایت کردی۔ڈاکٹرملیحہ لودھی نے ہائی کمشنرانسانی حقوق کی سالانہ رپورٹ پرردعمل دیتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے دفترکے مطالبے کی حمایت کرتے ہیں، متنازعہ ریاست کی صورتحال اب مزید خطرناک ہوچکی ہے ، انسانی حقوق کے ہائی کمشنر کے دفتر کوسفارشات پر عمل درآمد کرنے میں مدد فراہم کی جانی چاہئے ۔ ملیحہ لودھی نے کہا کہ کشمیری عوام دوماہ سے زیادہ عرصے سے جابرانہ قید میں رہ رہے ہیں، خوراک اور طبی سامان کی عدم فراہمی اور نقل و حمل کی عدم دستیابی کی وجہ سے صورتحال خراب ہوگئی، ہزاروں افراد ، خاص طور پر نوجوانوں کو گرفتار کرکے بھارت کے شہروں میں منتقل کیا گیا، مقبوضہ کشمیر کی سنگین صورتحال پر تشویش ظاہرکرنے میں انسانی حقوق ہائی کمشنر تنہا نہیں بلکہ سیکرٹری جنرل، سول سوسائٹی، انسانی حقوق کی تنظیمیں اور بین الاقوامی میڈیا بھی خدشات کا اظہارکرچکے ہیں ۔جبکہ ملیحہ لودھی نے نیویارک میں انسانی حقوق کمشنر سے ملاقات کی جس میں انہوں نے مقبوضہ وادی میں بھارتی جارحیت سے آگاہ کیا۔ اقوام متحدہ میں انسانی حقوق کی بحث میں ملیحہ لودھی نے کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کی جانب توجہ دلائی۔ ملیحہ لودھی نے کہا کہ انسانی حقوق کمشنر کو کشمیر میں اپنی رپورٹس کی روشنی میں کردار ادا کرنا چاہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں