دورہ آسٹریلیا میں کپتانی کیلئے حفیظ کا نام بھی زیرگردش ”بابوں “ کو بچانے کیلئے ینگسٹرز کو ”قربانی کا بکرا“ بنانے پرغور

مشکل دورہ آسٹریلیا میں ینگسٹرز کو ”قربانی کا بکرا“ بنانے پرغور ہونے لگا، سلیکٹرز کے خیال میں سٹارز بھی منتخب کیے تو جیتنے کا امکان کم ہے۔سری لنکا سے ہوم گراﺅنڈ پر تینوں ٹی ٹونٹی میچز ہارنے کے بعد نئے کوچ و چیف سلیکٹر مصباح الحق شدید دباﺅ کا شکار ہیں، انھوں نے کھلاڑیوں پر شکست کا ملبہ گرا دیا اوروہ کپتان سرفراز احمد سے بھی خوش نہیں ہیں۔
ایک تجویز یہ سامنے آئی ہے کہ آﺅٹ آف فارم سینئرز کی جگہ چند نئے کرکٹرزکو ٹیم میں شامل کر لیا جائے،آسٹریلیا میں تو سٹارز پر مشتمل ٹیمیں بھی نہیں جیتا کرتیں، اگر خدانخواستہ نتائج اچھے نہ رہے تو مزید تنقید سامنے آئےگی، ینگسٹرز ٹیم میں ہوئے تو”تشکیل نو“ کے نعرے سے بچت ہو جائےگی۔

مصباح الحق ساتھی سلیکٹرز سے مشاورت کیلئے فیصل آباد پہنچ گئے ہیں۔

مصباح قومی ٹی ٹونٹی ٹورنامنٹ میں کھلاڑیوں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے ساتھ ممکنہ سکواڈز پرمشاورت کریں گے، انھوں نے پی سی بی پر واضح کر دیا ہے کہ سرفراز احمد کو اب مزید قیادت نہیں سونپنی چاہیے، البتہ بورڈ حکام مشکل دورہ آسٹریلیا میں کوئی خطرہ مول لینے کو تیار نہیں، بابر اعظم کو ناتجربہ کار قرار دیتے ہوئے ذمہ داری سونپنا قبل از وقت قرار پایا توحیران کن طور پر محمد حفیظ کا نام پیش کر دیا گیا، چیف سلیکٹر کے پرانے دوست کیریبیئن لیگ میں بدترین ناکامی کا شکار ہوئے تھے۔