ایم این اے رفیق جمالی کی نااہلی، گورکھ ھلز کی کراچی آفس کو تالہ

رفیق جمالی نے اپنے لوگ بھرتی کرنے کے لیے 133 ملازم فارغ کردیے  133 ملازم کئی سالوں سے کانٹریکٹ پر کام کر رھے تھے  رفیق جمالی ملازموں کو پکا کرنے کے بجائے انھیں گھر بھیج دیا اور آفس بند کردیا  رفیق جمالی کی چیئرمین شپ کے دوران گورکھ ھلز پر ترقی نھیں ھوئی، زرائع  پھلی اتھارٹی کا چیئرمین سی ایم ھوا کرتا تھا۔ 2014 میں قانون میں ترمیم می گئی  ترمیم کے بعد مقامی ایم این اے رفیق احمد جمالی کو اتھارٹی کا چیئرمین بنادیا گیا  رفیق جمالی نے 5 سال میں گورکھ کو ترقی دلوانے کے بجائے نقصان دیا ھے، زرائع

اپنا تبصرہ بھیجیں