قوم کی اصل معمار اس معاشرہ کی مائیں ہوتی ہیں

وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر برائے قانون و ماحولیات اور ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضٰی وہاب نے کہا ہے کہ کسی بھی قوم کی اصل معمار اس معاشرہ کی مائیں ہوتی ہیں۔ آج میں اپنی ماں کی تربیت اور دعاؤں کی بدولت اس مقام پر ہوں۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ کمیشن آن اسٹیٹس آف ویمن کے اسٹریٹیجک پلان 19-2018 کی افتتاحی تقریب میں بحیثیت مہمانِ خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا

انہوں نے کہا کہ سندھ اسمبلی پاکستان کا وہ واحد قانون ساز ادارہ ہے جہاں انسانی حقوق اور حقوقِ نسواں سے متعلق سب سے زیادہ قانون سازی کی گئی ہے اور خواتین کے حقوق کے حوالے سے سندھ سب سے آگے ہے۔
مر تضیٰ وہاب  نے مزید کہا کہ ویمن جیل میں پبلک پرائیویٹ موڈ کے تحت سندھ حکومت نے قانونی معاونت فراہم کرکے ان خواتین قیدیوں کے جرمانہ کی رقم ادا کی ہے جو کہ جرمانہ کی ادائیگی سے قاصر ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ملک میں 125 سالہ قدیم جیل کے قانون کو آج کے تقاضوں کے تحت حکومت سندھ نے قانون قانون سازی کرکے تبدیل کیا ہے اس کے علاوہ عوامی مفاد کے لیے سندھ میں قانون سازی کی گئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ جب سوسائٹی اور حکومت باہمی مشاورت سے کام کریں گے تو عوامی فلاح کے لیئے مزید بہتر قانون سازی ممکن ہوسکے گی، اس مقصد کے لیئے حکومت سندھ نے پبلک سیفٹی کمیشن میں چار اراکین سول سوسائٹی سے لیے ہیں، تاکہ عوامی مشاورت سے معاملات کو مزید شفاف اور عوام دوست بنایا جائے۔
انہوں نے کہا کہ ہمیں خواتین کو مضبوط بنانا ہوگا تاکہ یہ خواتین اپنی نسل کی بہتر تربیت کرسکیں۔
صوبائی مشیر نے خطاب میں اپنے حالاتِ زندگی بتاتے ہوئے کہا کہ میرے والد کا انتقال میری کم عمری میں ہوگیا تھا اس وقت میری والدہ نے ہماری تعلیم و تربیت میں اپنی جان نچھاور کردی کیونکہ وہ ایک تعلیم یافتہ اور اچھی تربیت کی پر وردہ خاتون تھیں۔
انہوں نے مصائب کا مقابلہ کرتے ہوئے اپنے بچوں کی تربیت کی آج ہم جو کچھ ہیں اپنی والدہ کی دی ہوئی تربیت کی بدولت ہیں۔
اس تقریب میں کمشنر سندھ کمیشن آن اسٹیٹس آف ویمن نزہت شیریں ، سیکریٹری ترقی نسواں، ایڈیشنل آئی جی پولیس امیر شیخ اور دیگر نے بھی تقریب میں خطاب کیا

اپنا تبصرہ بھیجیں