دونوں ٹانگوں سےمحروم فاسٹ بولر

دونوں ٹانگوں سے معذور مانسہرہ کا ذوالفقار علی قومی کرکٹ ٹیم کا فاسٹ بولر بننے کا خواہش مند ہے۔
پاکستان کے صوبے خیبر پختونخواہ کے شہر مانسہرہ سے تعلق رکھنے والا 21 سالہ ذوالفقار علی پیدائشی طور پر دونوں ٹانگوں سے محروم ہے لیکن اُس نے اپنی معذوری کو اپنی مجبوری نہیں بنایا بلکہ ذوالفقار علی ہر وہ کام کر سکتا ہے جو ٹانگوں والے انسان کرسکتے ہیں
ذوالفقار علی کا کہنا ہے کہ مجھے اُمید ہے کہ ایک دِن میں اپنی صلاحیتوں کی بنیاد پر قومی کرکٹ ٹیم میں شامل ہوجاؤں گا اور اُس کے بعد ایک کرکٹ اکیڈمی بناؤں گا جہاں میرے جیسے معذور لوگ بھی ٹریننگ کرکے اپنی صلاحیتوں کی بُنیاد پر کامیابی حاصل کریں گے اور اُن لوگوں کو مواقع فراہم کروں گا جو ہمت ہار کے اپنے گھروں میں بیٹھے ہیں۔
برطانوی نشریاتی ادارے کی ایک رپورٹ کے مطابق ذوالفقار علی نے اپنے اہلِ خانہ کے اِسرار پر دو بار مصنوعی ٹانگین بھی لگوائی تھیں لیکن دونوں بار اُن کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ ذوالفقار علی کے گھٹنے نہیں ہیں جس کی وجہ سےتوازن نہیں بن پاتا تھا اور وہ گِر جاتے تھے۔
ذوالفقار علی کا کہنا ہے کہ لوگ مجھے دیکھ کر کہتے ہیں کہ ’یار دیکھو یہ بے چارہ دونوں ٹانگوں سے معذور ہے، اِس کو باہر نہیں نکلنا چاہیے‘، اور بعض اوقات تو لوگ میرے گھر صدقہ و خیرات بھی دے کر جاتے تھے جس سے مجھے بہت غصہ آتا تھا، جو لوگ ماضی میں مجھ پر ہنستے تھے آج وہ ہی لوگ میری صلاحیت دیکھ میری ہمت کو داد دیتے ہیں واضح رہے کہ ذوالفقار علی اپنی کرکٹ ٹیم کی کپتانی کرتے ہیں اور حال ہی میں اُنہوں نے ضلع ایبٹ آباد میں ہونے والے کھیلوں کے میلے میں حصہ لیا تھا جس میں اُنہوں نے تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کرکے ایبٹ آباد کی ٹیم کو فائنل میں فتح دِلوائی تھی، اِس کے ساتھ ہی ذوالفقار نے وزن اُٹھانے کے مقابلے میں بغیر کسی تیاری کے حصہ لے کر 90 کلو وزن اُٹھا کر دوسری پوزیشن حاصل کی تھی