پاکستان نے ون ڈے سیریز دو۔صفر سے جیت لی

پاکستان نے تیسرے ایک روزہ بین الاقوامی میچ میں سری لنکا کو پانچ وکٹوں سے شکست دے کر  تین میچوں کی سیریز دو۔صفر سے اپنے نام کرلی۔
عمدہ بیٹنگ پرفارمنس پر عابد علی کو  مین آف دی میچ جبکہ بابر اعظم کو مین آف دی سیریز قرار دیا گیا۔
نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں سیریز کے آخری میچ میں سری لنکا نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ پچاس اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 297 رنز بنائے۔
پاکستان نے مطلوبہ ہدف 48 اعشاریہ 2 اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر حاصل کرلیا۔
ہدف کے تعاقب میں پاکستانی اوپنرز فخرزمان اور عابد علی نے 123 رنز کا شاندار آغاز فراہم کیا، عابد علی تیزرفتار 74 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔
دوسرے ون ڈے میں سنچری بنانے والے بابر اعظم 30 رنز پر پردیپ کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔
اوپنر فخرزمان کو بھی پردیپ نے پویلین کی راہ دکھائی، وہ نسبتاً سست رفتار 76 رنز بناکر آؤٹ ہوئے، فخرزمان نے 91 گیندوں کا سامنا کیا۔
کپتان سرفراز احمد کو 23 رنز پر لہیرو کمارا نے کلین بولڈ کیا۔
حارث سہیل نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کرتے ہوئے 50 گیندوں پر 54 رنز بنائے جبکہ افتخار احمد نے 22 گیندوں 28 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی۔
یوں پاکستان نے مطلوبہ ہدف 49 ویں اوور کی دوسری گیند پر حاصل کرکے نا صرف تیسرا ون ڈے جیت لیا بلکہ سیریز بھی دو۔ایک سے اپنے نام کرلی۔
دونوں ملکوں کے درمیان تین میچوں کی ٹی20 سیریز کا آغاز 5 اکتوبر سے لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں ہوگ
ونندو ہرسانگا ڈی سلوا 10 اور لکشن سنداکان بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوئے۔
یوں سری لنکا کی ٹیم نے مقررہ پچاس اوورز میں 9وکٹوں کے نقصان پر 297 رنز بنائے۔
پاکستان کی طرف سے محمد عامر سب سے کامیاب بولر رہے، انہوں نے سری لنکا کے 3 بیٹسمینوں کا شکار کیاجبکہ عثمان شنواری، وہاب ریاض، شاداب خان اور محمد نواز نے ایک،ایک وکٹ حاصل کی