سید کمال کو مداحوں سے بچھڑے 10 سال بیت گئے

پاکستان فلم انڈسٹری پر ایک عرصے تک راج کرنے والے اداکار سید کمال کو مداحوں سے بچھڑے 10 سال بیت گئے.
27 اپریل 1934کو بھارت کے شہر میرٹھ میں پیدا ہونے والے سید کمال نے1960 اور1970کی دہائی میں اپنی بے مثال کردار نگاری سے شہرت حاصل کی، جب ان کی فلم توبہ ریلیز ہوئی تو ان کی اداکاری کو دیکھتے ہوئے فلم بینوں نے انہیں پاکستان کا راج کپور کہنا شروع کردیا
کمال کو ہر قسم کے کردار ادا کرنے میں کمال حاصل تھا،خاص طور پر ان کی مزاحیہ اداکاری کو لوگوں نے بے حد سراہا۔
اداکار کمال نے اس وقت کی مقبول ہیروئنز شمیم آراء ، دیبا، زیبا، نسیمہ خان، نشو، ممتاز، اور روزینہ وغیرہ کے ساتھ کئی یادگار فلموں میں کام کیا۔
کمال نے اپنے فنی کیرئیر کے دوران لگ بھگ 200 فلموں میں کردار نگاری کی۔
ان کے فلمی کیرئیر میں فلم بہن بھائی، روڈ ٹو سوات، گلفروش، آشیانہ، دل نے تجھے مان لیا، گھر داما د اور دیگر فلمیں شامل ہیں۔
انھیں ٹیلی وژن پر کما ل شو کے نام سے بھی کافی شہرت ملی، اپنے کیریئر کے دوران اداکار کمال نے بہترین کارکردگی پر بے شمار فلمی ایوارڈز حاصل کیے جبکہ ایک پنجابی زبان کی فلم پر بیک وقت بہترین فلم ساز، ہدایت کار اور اداکار کا ایوارڈ حاصل کیا صحت کی خرابی کے باعث وہ کافی عرصے تک شوبز کی دنیا سے دور رہے اور طویل علالت کے بعد 75برس کی عمر میں یکم اکتوبر 2009کو کراچی میں انتقال کرگئے جس کے ساتھ ہی منفرد اداکاری کا ایک حسین باب اپنے اختتام کو پہنچ گیا۔